Question Answers

Compiled by Khatim-ul-Ambia University (Hausary Madressa) Karachi


101

Category : طہارت

Question : اگر پانی کی مقدار کُر سے زیادہ ہو اور کوئی عین نجاست جیسے خون اس کُر کے کسی خاص حصے کو متغیر کردے تو باقی حصے کے بارے میں کیا حکم ہے؟


Answer-1: پانی کُر سے زیادہ ہو اور خون پانی کے کسی خاص حصے کو نجس کردے تو اگر باقی حصہ جو متغیر نہیں ہوا ہے کُر سے کم ہو تو باقی حصہ بھی نجس ہو جائے گا لیکن اگر کُر ہو تو باقی حصہ پاک رہے گا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:11 | volume:0


Answer-2: پانی کُر سے زیادہ ہو اور خون پانی کے کسی خاص حصے کو نجس کردے تو اگر باقی حصہ جو متغیر نہیں ہوا ہے کُر سے کم ہو تو باقی حصہ بھی نجس ہو جائے گا لیکن اگر کُر ہو تو باقی حصہ پاک رہے گا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:5 | volume:0


Answer-3: پانی کُر سے زیادہ ہو اور خون پانی کے کسی خاص حصے کو نجس کردے تو اگر باقی حصہ جو متغیر نہیں ہوا ہے کُر سے کم ہو تو باقی حصہ بھی نجس ہو جائے گا لیکن اگر کُر ہو تو باقی حصہ پاک رہے گا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:8 | volume:0


Answer-4: پانی کُر سے زیادہ ہو اور خون پانی کے کسی خاص حصے کو نجس کردے تو اگر باقی حصہ جو متغیر نہیں ہوا ہے کُر سے کم ہو تو باقی حصہ بھی نجس ہو جائے گا لیکن اگر کُر ہو تو باقی حصہ پاک رہے گا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:9 | volume:0



102

Category : حج

Question : کتنی مرتبہ تلبیہ کہنا واجب ہے؟


Answer-1: ایک مرتبہ تلبیہ کہنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:140 | volume:0


Answer-2: ایک مرتبہ تلبیہ کہنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:105 | volume:0


Answer-3: ایک مرتبہ تلبیہ کہنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:114 | volume:0


Answer-4: ایک مرتبہ تلبیہ کہنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:105 | volume:0



103

Category : حج

Question : کیا طواف کرتے وقت سامنے دیکھنا ضروری ہے؟


Answer-1: طواف کرتے وقت سامنے دیکھنا واجب نہیں ہے بلکہ دائیں بائیں دیکھا جاسکتا ہے البتہ احتیاط واجب کی بنا پر اتنا نہ گھومے کے اپنے پیچھے کی کچھ مقدار دیکھ سکے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:استفتاات | Page:325 | volume:0


Answer-2: طواف کرتے وقت سامنے دیکھنا واجب نہیں ہےبلکہ دائیں بائیں یا پیچھے کی جانب دیکھا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:187 | volume:0


Answer-3: طواف کرتے وقت سامنے دیکھنا واجب نہیں ہےبلکہ دائیں بائیں یا پیچھے کی جانب دیکھا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:208 | volume:0


Answer-4: طواف کرتے وقت سامنے دیکھنا واجب نہیں ہےبلکہ دائیں بائیں یا پیچھے کی جانب دیکھا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی خامنہ ای | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:187 | volume:0



104

Category : طہارت

Question : پیشاب کامقام پانی سے کتنی بار دھونے سے پاک ہوجاتا ہے؟


Answer-1: مقام پیشاب ایک مرتبہ دھونے سے پاک ہو جاتا ہے اگرچہ احتیاط مستحب دوبار دھونا اور افضل تین مرتبہ دھونا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:18 | volume:0


Answer-2: پیشاب کرنے کے بعد مقام پیشاب پر کر یا جاری پانی ایک مرتبہ ڈالنا کافی ہےجبکہ قلیل پانی سے احتیاط واجب کی بنا پر دو مرتبہ دھونا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:14 | volume:0


Answer-3: مقام پیشاب کو کر پانی یا جاری پانی سے ایک مرتبہ قلیل پانی سےاحتیاط واجب کی بنا پر دو مرتبہ دھونا چاہیے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:16 | volume:0


Answer-4: مقام پیشاب کو پاک کرنے کیلئےمردوں کیلئے پیشاب کرنے کے بعد ایک مرتبہ جبکہ عورتوں کے لئے بنا پر احتیاط واجب دو مرتبہ دھونا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:12 | volume:0



105

Category : حج

Question : اگر طواف کی حالت میں خاتون کے حجاب میں کچھ کمی ہو مثلاً چند بال دکھائی دیتے ہوں تو طواف کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر طواف کی حالت میں خاتون کے چند بال دکھائی دیں طواف صحیح ہے لیکن گناہ گار ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:استفتاات | Page:389 | volume:0


Answer-2: اگر طواف کی حالت میں خاتون جان بوجھ کر حجاب کی رعایت نہ کرے اور کچھ بال دکھائی دیں تو احتیاط واجب کی بنا پر طواف صحیح نہیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:استفتاات | Page:389 | volume:0


Answer-3: اگر طواف کی حالت میں خاتون کے چند بال حکم نہ جاننے کی وجہ سے دکھائی دیں تو طواف صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:استفتاات | Page:389 | volume:0


Answer-4: اگر طواف کی حالت میں خاتون کے چند بال دکھائی دیں طواف صحیح ہے لیکن گناہ گار ہے۔اگر چہ یہ حرام کام کی تکب ہوئی ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی خامنہ ای | Book:استفتاات | Page:389 | volume:0



106

Category : حج

Question : جو افراد طواف کرنے کی قدرت نہیں رکھتے وہ نائب لیں یا کسی چیز پر بیٹھ کر طواف کریں؟


Answer-1: جو افراد طواف کرنے کی قدرت نہیں رکھتے وہ احتیاط واجب کی بنا پر نائب بھی لیں کسی وسیلے کے ذریعہ بھی طواف کریں اور پوری مسجد الحرام مطاف ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:340 | volume:0


Answer-2: جو افراد طواف کرنے کی قدرت نہیں رکھتے وہ احتیاط واجب کی بنا پر نائب بھی لیں کسی وسیلے کے ذریعہ بھی طواف کریں اور پوری مسجد الحرام مطاف ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:استفتاات | Page:339 | volume:0


Answer-3: جو افراد طواف کرنے کی قدرت نہیں رکھتے وہ احتیاط واجب کی بنا پر نائب بھی لیں کسی وسیلے کے ذریعہ بھی طواف کریں اور پوری مسجد میں طواف کرنا صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی خامنہ ای | Book:استفتاات | Page:339 | volume:0



107

Category : حج

Question : عمرہ تمتع کے طواف کی نماز کا کس مقام پر پڑھنا ضروری ہے؟


Answer-1: عمرہ تمتع کے طواف کی نماز کا مقام ابراھیم کے قریب پڑھنا واجب ہے احتیاط واجب کی بنا پر مقام کے پیچھے پڑھی جائے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:245 | volume:0


Answer-2: عمرہ تمتع کے طواف کی نماز کا مقام ابراھیم کے قریب پڑھنا واجب ہے احتیاط واجب کی بنا پر مقام کےپیچھے پڑھی جائے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:233 | volume:0


Answer-3: عمرہ تمتع کے طواف کی نماز کا مقام ابراھیم کے قریب پڑھنا واجب ہے بلکہ مقام ابراھیم کے پیچھے پڑھنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:256 | volume:0


Answer-4: عمرہ تمتع کے طواف کی نماز کا مقام ابراھیم کے قریب پڑھنا واجب ہے اگر پڑھنا ممکن نہ ہو تو مسجد الحرام میں مقام کے پیچھے پڑھنا چاہیے

Scholar:آیت اللہ سید علی خامنہ ای | Book:مناسک حج | Page:233 | volume:0


Answer-5: عمرہ تمتع کے طواف کی نماز کا مقام ابراھیم کے قریب پڑھنا واجب ہے بلکہ مقام ابراھیم کے پیچھے پڑھنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:168 | volume:0



108

Category : حج

Question : اگر کوئی شخص واجب طواف کی نماز مقام ابراھیم کے پیچھے یا دائیں بائیں نہ پرھسکے تو اسکا کیا وظیفہ ہے؟


Answer-1: اگر کوئی شخص واجب طواف کی نماز مقام ابراھیم کے پیچھے یا دائیں بائیں نہ پڑھ سکے تو مسجد میں جہاں بھی ممکن ہو پڑھ سکتاہے البتہ مقام کے جتنا نذدیک ہو بہتر ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:245 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی شخص واجب طواف کی نماز مقام ابراھیم کے پیچھے یا دائیں بائیں نہ پڑھ سکے تو دیکھے کہ پیچھے دائیں بائیں میں سے کونسا مقام نذدیک ہےاگر تینوں برابر ہوں تو پیچھے پڑھے اور اگر دائیں بائیں نذدیک ہوں لیکن یہ مقام سے قریب نہ ہوں تو بھی پشت پر اکتفا کرے اور ایک نماز نذدیک ترین طرف پڑھے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:233 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی شخص واجب طواف کی نماز مقام ابراھیم کے پیچھے نہ پڑھ سکتا ہو تو احتیاط واجب کی بنا پر نذدیک سے نذدیک تر مکان کو ملاحظہ کرتے ہوئے پڑھ سکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:256 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی شخص واجب طواف کی نماز مقام ابراھیم کے پیچھے نہ پڑسکے تو مسجد الحرام میں مقام کے پیچھے فاصلہ سے پڑھ سکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی خامنہ ای | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:233 | volume:0


Answer-5: اگر کوئی شخص واجب طواف کی نماز مقام ابراھیم کے پیچھے یا دائیں بائیں نہ پڑھ سکے تو مسجد میں جہاں بھی ممکن ہو پڑھ سکتاہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:168 | volume:0



109

Category : حج

Question : طواف کی نماز طواف کے کتنی دیر بعد تک پڑھی جاسکتی ہے؟


Answer-1: احتیاط واجب کی بنا پرطواف کی نماز طواف کے فوراً بعد پڑھی جائے اسطرح کہ عرف کی نگاہ میں ان کے درمیان فاصلہ نہ ہو۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:246 | volume:0


Answer-2: احتیاط واجب کی بنا پرطواف کی نماز طواف کے فوراً بعد پڑھی جائے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:232 | volume:0


Answer-3: طواف کی نمازفوراً طواف کے بعد ادا کی جائے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:255 | volume:0


Answer-4: طواف کی نمازفوراً طواف کے بعد ادا کی جائے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی خامنہ ای | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:232 | volume:0


Answer-5: طواف کی نماز طواف کے فوراً بعد ادا کی جائے اسطرح کہ ان کے درمیان متعارف فاصلہ سے زیادہ تاخیر نہ کی جائے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:168 | volume:0



110

Category : طہارت

Question : اگر رفع حاجت کے بعد مقام پائخانہ کو پانی سے ایک مرتبہ پاک کیا جائے تو کیا پاک ہو جائے گا؟


Answer-1: اگر مقام پائخانہ کو اس طرح پانی ڈال کر پاک کیا جائے کہ نجاست کا کوئی زرہ باقی نہ بچے تو ایک مرتبہ دھونا کافی ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:18 | volume:0


Answer-2: اگر مقام پائخانہ کو اس طرح پانی ڈال کر پاک کیا جائے کہ نجاست کا کوئی زرہ باقی نہ بچے تو ایک مرتبہ دھونا کافی ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:12 | volume:0


Answer-3: اگر مقام پائخانہ کو اس طرح پانی ڈال کر پاک کیا جائے کہ نجاست کا کوئی زرہ باقی نہ بچے تو ایک مرتبہ دھونا کافی ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:14 | volume:0


Answer-4: اگر مقام پائخانہ کو اس طرح پانی ڈال کر پاک کیا جائے کہ نجاست کا کوئی زرہ باقی نہ بچے تو ایک مرتبہ دھونا کافی ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:16 | volume:0



111

Category : طہارت

Question : نماز پڑھنے کے بعد شک ہو کہ نماز سے قبل شرمگاہ کو رفع حاجت کے بعد پاک کیا ہے یا نہیں تو اب اس کا کیا وظیفہ ہے؟


Answer-1: اگر نماز پڑھنے کے بعد شک کرے کہ شرمگاہ کو پاک کیا تھا یا نہیں تو اس کی نماز صحیح ہےلیکن بعد والی نمازوں کے لئے شرمگاہ کو پاک کرنا ہوگا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:18 | volume:0


Answer-2: اگر نماز پڑھنے کے بعد شک کرے کہ شرمگاہ کو پاک کیا تھا یا نہیں تو اس کی نماز صحیح ہےلیکن بعد والی نمازوں کے لئے شرمگاہ کو پاک کرنا ہوگا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:13 | volume:0


Answer-3: اگر نماز پڑھنے کے بعد شک کرے کہ شرمگاہ کو پاک کیا تھا یانہیں جبکہ وہ یہ احتمال دے کہ نماز سے قبل اپنی حالت کی جانب متوجہ تھا تواس کی نماز صحیح ہے،جبکہ بعد والی نمازوں کیلئے شرمگاہ کو پاک کرنا ہوگا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:15 | volume:0


Answer-4: اگر نماز پڑھنے کہ بعد شک کرے کہ شرمگاہ کو پاک کیا تھا کہ نہیں جبکہ اسے نماز سے قبل پاک کرنے کے حوالے سے غفلت ہونے کا علم نہ ہو تو اس کی نماز صحیح ہے لیکن بعد والی نمازوں کیلئے شرمگاہ کو پاک کرنا ہوگا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:17 | volume:0



112

Category : طہارت

Question : اگر شک ہوجائے کہ رفع حاجت کے بعد شرمگاہ کو پاک کیا ہے یا نہیں تو اس صورت میں حکم شرعی کیا ہے؟


Answer-1: اگر شک ہوجائے کہ رفع حاجت کے بعد شرمگاہ کو پاک کیا ہے یا نہیں تو پاک کرنا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:18 | volume:0


Answer-2: اگر شک ہوجائے کہ رفع حاجت کے بعد شرمگاہ کو پاک کیا ہے یا نہیں تو پاک کرنا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:12 | volume:0


Answer-3: اگر شک ہوجائے کہ رفع حاجت کے بعد شرمگاہ کو پاک کیا ہے یا نہیں تو پاک کرنا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:15 | volume:0


Answer-4: اگر شک ہوجائے کہ رفع حاجت کے بعد شرمگاہ کو پاک کیا ہے یا نہیں تو پاک کرنا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:17 | volume:0



113

Category : طہارت

Question : وزی اور ودی کسے کہتے ہیں اور کیا یہ نجس ہے؟


Answer-1: وہ رطوبت جو منی نکلنے کے بعد مرد سے خارج ہو وزی اور وہ رطوبت جو پیشاب کرنے کے بعد خارج ہو ں ودی کہلاتی ہے اگر ان میں کوئی نجاست شامل نہ ہو تو پاک ہیں۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:19 | volume:0


Answer-2: وہ رطوبت جو منی نکلنے کے بعد مرد سے خارج ہو وزی اور وہ رطوبت جو پیشاب کرنے کے بعد خارج ہو ں ودی کہلاتی ہے اگر ان میں کوئی نجاست شامل نہ ہو تو پاک ہیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:13 | volume:0


Answer-3: وہ رطوبت جو منی نکلنے کے بعد مرد سے خارج ہو وزی اور وہ رطوبت جو پیشاب کرنے کے بعد خارج ہو ں ودی کہلاتی ہے اگر ان میں کوئی نجاست شامل نہ ہو تو پاک ہیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:15 | volume:0


Answer-4: وہ رطوبت جو منی نکلنے کے بعد مرد سے خارج ہو وزی اور وہ رطوبت جو پیشاب کرنے کے بعد خارج ہو ں ودی کہلاتی ہے اگر ان میں کوئی نجاست شامل نہ ہو تو پاک ہیں۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:17 | volume:0



114

Category : طہارت

Question : اگر کوئی پیشاب کرنے کے بعد استبراء کرے پھر اس سے کوئی رطوبت خارج ہو تو کیا وہ رطوبت نجس ہے؟


Answer-1: اگر پیشاب کرنے کے بعد استبراء کیا ہو اور پھر اس سے کوئی رطوبت خارج ہو اور وہ نہ جانتا ہو کہ یہ رطوبت پیشاب ہے یا منی کے علاوہ کوئی دوسری رطوبت تومذکورہ رطوبت پاک ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:19 | volume:0


Answer-2: اگر پیشاب کرنے کے بعد استبراء کیا ہو اور پھر اس سے کوئی رطوبت خارج ہو اور وہ نہ جانتا ہو کہ یہ رطوبت پیشاب ہے یا وزی ،ودی یا مذی تومذکورہ رطوبت پاک ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:13 | volume:0


Answer-3: اگر پیشاب کرنے کے بعد استبراء کیا ہو اور پھر اس سے کوئی رطوبت خارج ہو اور وہ نہ جانتا ہو کہ یہ رطوبت پیشاب ہے یا وزی ،ودی یا مذی تومذکورہ رطوبت پاک ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:15 | volume:0


Answer-4: اگر پیشاب کرنے کے بعد استبراء کیا ہو اور پھر اس سے کوئی رطوبت خارج ہو اور وہ نہ جانتا ہو کہ یہ رطوبت پیشاب ہے یا منی کے علاوہ کوئی دوسری رطوبت تومذکورہ رطوبت پاک ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:17 | volume:0



115

Category : نماز

Question : کیا مرد بغیر قمیض کے نماز پڑھ سکتا ہے؟


Answer-1: مرد کے لئے نماز میں قمیض پہننا واجب نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:156 | volume:0


Answer-2: مرد کے لئے نماز میں قمیض پہننا واجب نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:127 | volume:0


Answer-3: مرد کے لئے نماز میں قمیض پہننا واجب نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:141 | volume:0


Answer-4: مرد کے لئے نماز میں قمیض پہننا واجب نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:146 | volume:0



116

Category : نماز

Question : کیا سجدہ سھو کے لئے رو بقبلہ ہونا واجب ہے؟


Answer-1: سجدہ سھو کے لئے روبقبلہ ہونا واجب نہیں ہے البتہ احتیاط مستحب ہےرو بقبلہ ہو۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:155 | volume:0


Answer-2: سجدہ سھو کے لئے روبقبلہ ہونا واجب نہیں ہے البتہ احتیاط مستحب ہےرو بقبلہ ہو۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:125 | volume:0


Answer-3: سجدہ سھو کے لئے روبقبلہ ہونا واجب نہیں ہے البتہ احتیاط مستحب ہےرو بقبلہ ہو۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:139 | volume:0


Answer-4: اگر سجدہ سھو بھولے ہوئے تشھد کے لئے کیا جارہا ہے تو روبقبلہ ہونا واجب ہے ورنہ احتیاط مستحب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:145 | volume:0



117

Category : نماز

Question : اگر کسی نے مسئلہ نہ جاننے کی وجہ سے نجس لباس مین نماز پڑھ لی کیا دوبارہ نماز پرھنا واجب ہے؟


Answer-1: اگر کسی شخص نے مسئلہ جاننے میں کوتاہی کی اور مسئلہ نہ جاننے کی وجہ سے نماز نجس لباس میں پڑھی احتیاط واجب کی بنا پر دوبارہ نماز پڑھےگا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:159 | volume:0


Answer-2: اگر کسی شخص نے مسئلہ جاننے میں کوتاہی کی اور مسئلہ نہ جاننے کی وجہ سے نماز نجس لباس میں پڑھی اس کی نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:128 | volume:0


Answer-3: اگر کسی شخص نے مسئلہ جاننے میں کوتاہی کی اور مسئلہ نہ جاننے کی وجہ سے نماز نجس لباس میں پڑھی اس کی نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:142 | volume:0


Answer-4: اگر کسی شخص نے مسئلہ جاننے میں کوتاہی کی اور مسئلہ نہ جاننے کی وجہ سے نماز نجس لباس میں پڑھی اس کی نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:148 | volume:0



118

Category : نماز

Question : مرد بنیان پہن کر نماز پڑھ سکتا ہے؟


Answer-1: مرد بنیان پہن کر نماز پڑھ سکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:156 | volume:0


Answer-2: مرد بنیان پہن کر نماز پڑھ سکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:127 | volume:0


Answer-3: مرد بنیان پہن کر نماز پڑھ سکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:141 | volume:0


Answer-4: مرد بنیان پہن کر نماز پڑھ سکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:146 | volume:0



119

Category : نماز

Question : کسی کو نماز کے بعد پتہ چلے کے اس کا لباس نجس ہے تو اس نماز کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: جس کو یقین ہو کہ لباس نجس نہیں ہے اور نماز کے بعد معلوم ہو کہ نجس تھا تو نمازصحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:159 | volume:0


Answer-2: اگر نہ جانتا ہو کہ لباس نجس ہے نماز کے بعد معلوم ہو کہ نجس تھا تو نماز صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:128 | volume:0


Answer-3: اگر نہ جانتا ہو کہ لباس نجس ہے نماز کے بعد معلوم ہو کہ نجس تھا تو نماز صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:142 | volume:0


Answer-4: اگر نہ جانتا ہو کہ لباس نجس ہے نماز کے بعد معلوم ہو کہ نجس تھا تو نماز صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:149 | volume:0



120

Category : نماز

Question : اگر نجس لباس پاک کرنے کے بعد نماز پڑھ لے پھر معلوم ہو کہ پاک نہیں ہوا تھا تو نمازکا کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر نجس لباس پاک کرنے کے بعد نماز پڑھے پھر معلوم ہو کہ پاک نہیں ہوا تھا تو نماز صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:160 | volume:0


Answer-2: اگر نجس لباس پاک کرنے کے بعد نماز پڑھے پھر معلوم ہو کہ پاک نہیں ہوا تھا تو نماز صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:130 | volume:0


Answer-3: اگر نجس لباس پاک کرنے کے بعد نماز پڑھے پھر معلوم ہو کہ پاک نہیں ہوا تھا تو نماز صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:143 | volume:0


Answer-4: اگر نجس لباس پاک کرنے کے بعد نماز پڑھے پھر معلوم ہو کہ پاک نہیں ہوا تھا تو نماز صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:150 | volume:0



121

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : حلال گوشت جانور کے غدود کھانے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: جانورں کے غدود ( جو گرہ کی طرح گوشت میں پڑھ جاتی ہیں) کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:514 | volume:0


Answer-2: جانورں کے غدود ( جو گرہ کی طرح گوشت میں پڑھ جاتی ہیں) کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:419 | volume:0


Answer-3: جانورں کے غدود ( جو گرہ کی طرح گوشت میں پڑھ جاتی ہیں) کو کھانے سے اجتناب کیا جائے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:475 | volume:0


Answer-4: جانورں کے غدود ( جو گرہ کی طرح گوشت میں پڑھ جاتی ہیں) کو کھانے سے اجتناب کیا جائے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین | Page:390 | volume:3


Answer-5: جانورں کے غدود ( جو گرہ کی طرح گوشت میں پڑھ جاتی ہیں) کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:513 | volume:0



122

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : حلال جانور کی تلی کھانے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: جانور کی تلی کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:514 | volume:0


Answer-2: جانور کی تلی کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:419 | volume:0


Answer-3: جانورں کی تلی کھانے سے احتیاط کی بنا پر اجتناب کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:475 | volume:0


Answer-4: جانورں کی تلی کھانے سے احتیاط کی بنا پر اجتناب کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین | Page:390 | volume:3


Answer-5: جانور کی تلی کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:513 | volume:0



123

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : آیا حلال گوشت جانور کا پتِہ کھانا حلال ہے؟


Answer-1: جانور کا پِتہ کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:514 | volume:0


Answer-2: جانور کا پِتہ کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:419 | volume:0


Answer-3: احتیاط کی بنا پر جانور کا پِتہ کھانے سے اجتناب کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:475 | volume:0


Answer-4: جانور کا پِتہ کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:513 | volume:0


Answer-5: احتیاط کی بنا پر جانور کا پِتہ کھانے سے اجتناب کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین | Page:390 | volume:3



124

Category : نماز

Question : اگر کسی کو قبلے کی سمت کا علم نہ ہو تو نماز کس سمت ادا کرے گا؟


Answer-1: نمازی کے لئےلازم ہے کہ قبلہ کی سمت کا یقین حاصل کرے یا ایسی چیز جو یقین کےقائم مقام ہو جیسے دوعادل کی حسی گواہی۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:156 | volume:0


Answer-2: نمازی کے لئےلازم ہے کہ قبلہ کی سمت کا یقین حاصل کرے یا ایسی چیز جو یقین کےقائم مقام ہو جیسے دوعادل کی گواہی۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:126 | volume:0


Answer-3: نمازی کے لئےلازم ہے کہ قبلہ کی سمت کا یقین حاصل کرے یا ایسی چیز جو یقین کےقائم مقام ہو جیسے دوعادل کی گواہی۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:139 | volume:0


Answer-4: نمازی کے لئےلازم ہے کہ قبلہ کی سمت کا یقین حاصل کرے یا ایسی چیز جو یقین کے قائم مقام ہو جیسے دوعادل کی حسی گواہی۔یا کسی بھروسے مند شخص کی گواہی جسکے بر خلاف گمان نہ ہو اسی طرح مسلمانوں کے شہر سے یا قبور سے گمان حاصل کرے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:145 | volume:0



125

Category : نماز

Question : پکنک یا ساحل سمندر پر اگر قبلے کی سمت معلوم نہ ہو تو نماز کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: نمازی کے لئےلازم ہے کہ کوشش کرکے قبلہ کی سمت کا یقین حاصل کرے یا ایسی چیز جو یقین کےقائم مقام ہو جیسے دوعادل کی حسی گواہی کے مطابق نماز پڑھے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:156 | volume:0


Answer-2: نمازی کے لئےلازم ہے کہ کوشش کرکے قبلہ کی سمت کا یقین حاصل کرے یا دوعادل کی حسی گواہی کے مطابق نماز پڑھے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:126 | volume:0


Answer-3: نمازی کے لئےلازم ہے کہ کوشش کرکے قبلہ کی سمت کا یقین حاصل کرے یا ایسی چیز جو یقین کےقائم مقام ہو جیسے دوعادل کی گواہی کے مطابق عمل کرے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:139 | volume:0


Answer-4: نمازی کے لئےلازم ہے کہ کوشش کرکے قبلہ کی سمت کا یقین یا اطمینان حاصل کرے یا دوعادل کی گواہی کے مطابق نماز پڑھے ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:145 | volume:0



126

Category : نماز

Question : اگر بھولے سے نماز ظہر سے پہلے نماز عصر پڑھنی شروع کردے اور درمیان میں یاد آجائے تو کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر بھولے سے ظہر سے پہلے عصر پڑھنی شروع کردے اور یاد آجائے تو ضروری ہے کہ نیت کو ظہر کی طرف پلٹا دے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:143 | volume:0


Answer-2: اگر بھولے سے ظہر سے پہلے عصر پڑھنی شروع کردے اور یاد آجائے تو ضروری ہے کہ نیت کو ظہر کی طرف پلٹا دے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:117 | volume:0


Answer-3: اگر بھولے سے ظہر سے پہلے عصر پڑھنی شروع کردے اور یاد آجائے تو ضروری ہے کہ نیت کو ظہر کی طرف پلٹا دے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:128 | volume:0


Answer-4: اگر بھولے سے ظہر سے پہلے عصر پڑھنی شروع کردے اور یاد آجائے تو ضروری ہے کہ نیت کو ظہر کی طرف پلٹا دے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:136 | volume:0



127

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : حلال گوشت جانوروں کےعضو تناسل کھانے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: جانوروں کے عضو تناسل کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:514 | volume:0


Answer-2: جانوروں کے عضو تناسل کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:419 | volume:0


Answer-3: جانوروں کے عضو تناسل کھانے سے اجتناب کیا جائے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:475 | volume:0


Answer-4: جانوروں کے عضو تناسل کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:513 | volume:0


Answer-5: جانوروں کے عضو تناسل کھانے سے اجتناب کیا جائے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین | Page:390 | volume:3



128

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : حلال گوشت جانور کے پٹھے کھانے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: احتیاط واجب کی بنا پر ان پٹھوں کو جو ریڑھ کی ہڈی کے دونوں طرف ہوتے ہیں ،کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:514 | volume:0


Answer-2: ان پٹھوں کو جو ریڑھ کی ہڈی کے دونوں طرف ہوتے ہیں، کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:419 | volume:0


Answer-3: احتیاط واجب کی بنا پر ان پٹھوں کو کھانے سے اجتناب کیا جائے جو ریڑھ کی ہڈی کے دونوں طرف ہوتے ہیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:475 | volume:0


Answer-4: احتیاط واجب کی بنا پر ان پٹھوں کو کھانے سے اجتناب کیا جائے جو ریڑھ کی ہڈی کے دونوں طرف ہوتے ہیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین | Page:390 | volume:3


Answer-5: احتیاط واجب کی بنا پر ان پٹھوں کو جو ریڑھ کی ہڈی کے دونوں طرف ہوتے ہیں ،کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:513 | volume:0



129

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : حلال گوشت جانور کے حرام مغز کھانے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: جانور کا حرام مغز جو ریڑھ کی ہڈی میں ہوتا ہے کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:514 | volume:0


Answer-2: جانور کا حرام مغز جو ریڑھ کی ہڈی میں ہوتا ہے کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:419 | volume:0


Answer-3: احتیاط کی بنا پر جانور کے حرام مغز کو جو ریڑھ کی ہڈی میں ہوتا ہے کھانے سے اجتناب کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:475 | volume:0


Answer-4: احتیاط کی بنا پر جانور کے حرام مغز کو جو ریڑھ کی ہڈی میں ہوتا ہے کھانے سے اجتناب کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین | Page:390 | volume:3


Answer-5: جانور کا حرام مغز جو ریڑھ کی ہڈی میں ہوتا ہے کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:513 | volume:0



130

Category : نماز

Question : اگر کوئی سجدے والی آیت کو پڑھ کر سجدہ کرنا بھول جائے تو کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر کوئی سجدے والی آیت کو پڑھ کر سجدہ کرنا بھول جائے تو جب بھی یاد آئے اسی وقت سجدہ کرنا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:210 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی سجدے والی آیت کو پڑھ کر سجدہ کرنا بھول جائے تو جب بھی یاد آئے اسی وقت سجدہ کرنا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:170 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی سجدے والی آیت کو پڑھ کر سجدہ کرنا بھول جائے تو جب بھی یاد آئے اسی وقت سجدہ کرنا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:187 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی سجدے والی آیت کو پڑھ کر سجدہ کرنا بھول جائے تو جب بھی یاد آئے اسی وقت سجدہ کرنا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:194 | volume:0



131

Category : نماز

Question : سورہ حم تنزیل من الرحمنٰ(فصلت 41)کے کونسی آیت نمبر پر سجدہ واجب ہے؟


Answer-1: سورہ حم تنزیل من الرحمنٰ(فصلت 41)کی آیت نمبر37 کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:عروۃالوثقیٰ | Page:239 | volume:2


Answer-2: سورہ حم تنزیل من الرحمنٰ(فصلت 41)کی آیت نمبر37 کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:عروۃالوثقیٰ | Page:239 | volume:2


Answer-3: سورہ حم تنزیل من الرحمنٰ(فصلت 41)کی آیت نمبر37 کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:عروۃالوثقیٰ | Page:239 | volume:2


Answer-4: سورہ حم تنزیل من الرحمنٰ(فصلت 41)کی آیت نمبر37 کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:منھاج الصالحین | Page:194 | volume:2



132

Category : نماز

Question : اگر کوئی سجدے والی آیت کو لا ئیوسنے تو سجدے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر کوئی سجدے والی آیت کو لا ئیو سنے تو سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:210 | volume:0


Answer-2: اگر سجدے والی آیت کو قرآن کے ارادے سے پڑھا جائے اور لائیو سُنا جائے تو سجدہ واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:170 | volume:0


Answer-3: اگر سجدے والی آیت کو قرآن کے ارادے سے پڑھا جائے اور لائیو سُنا جائے تو سجدہ واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:195 | volume:0


Answer-4: اگر سجدے والی آیت کو قرآن کے ارادے سے پڑھا جائے اور لائیو سُنا جائے تو سجدہ واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:187 | volume:0



133

Category : طہارت

Question : کرُ پانی کس طرح ثابت ہوتا ہے؟


Answer-1: دوطریقوں سے کُر ثابت ہوتا ہے۔1-انسان کو یقین ہو یا اطمینان ہو کہ پانی کُر ہے۔2-دوعادل مرد کہیں کہ فلاں پانی کُر ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:11 | volume:0


Answer-2: دوطریقوں سے کُر ثابت ہوتا ہے۔1-انسان کو یقین ہو کہ پانی کُر ہے۔2-دوعادل مرد کہیں کہ پانی کُر ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:6 | volume:0


Answer-3: دوطریقوں سے کُر ہونے کا حکم لگایا جا سکتا ہے۔1-خود انسان کو یقین ہو کہ کُر ہے2- دوعادل مرد کہیں کہ کُر ہے اور بعید نہیں ہے ایک عادل یا اس مرد کے کہنے سے بھی ثابت ہو جا ئے جو قابل بھروسہ ہو۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:8 | volume:0


Answer-4: کُر کا ہونا چار طریقوں سے ثابت ہو تا ہے۔1-خود انسان کو یقین ہو یا اطمینان ہو کہ پانی کُر ہے۔2-دو عادل مرد کہیں کہ پانی کُر ہے۔3-جو شخص قابل بھروسہ ہو کہے کہ پانی کر ہے جبکہ اس کے کہنے کے بر خلاف گمان نہ ہو۔4-جس شخص کہ اختیار میں پانی ہو وہ کہے کہ کر ہے جبکہ اس پر جھوٹے ہونے کی تہمت نہ ہو ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:10 | volume:0



134

Category : نماز

Question : سورہ (العلق:96) کی کس آیت کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے؟


Answer-1: سورہ (العلق:96) کی آیت نمبر 19 کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:210 | volume:0


Answer-2: سورہ (العلق:96) کی آیت نمبر 19 کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:170 | volume:0


Answer-3: سورہ (العلق:96) کی آیت نمبر 19 کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:187 | volume:0


Answer-4: سورہ (العلق:96) کی آیت نمبر 19 کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:194 | volume:0



135

Category : نماز

Question : سورہ (النجم:53) کی کس آیت کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے؟


Answer-1: سورہ (النجم:53)کی آیت نمبر 62 کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:عروۃالوثقیٰ | Page:239 | volume:2


Answer-2: سورہ (النجم:53)کی آیت نمبر 62 کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:عروۃالوثقیٰ | Page:239 | volume:2


Answer-3: سورہ (النجم:53)کی آیت نمبر 62 کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:عروۃالوثقیٰ | Page:239 | volume:2


Answer-4: سورہ (النجم:53)کی آیت نمبر 62 کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:منھاج الصالحین | Page:194 | volume:2



136

Category : نماز

Question : سورہ الم تنزیل الکتبٰ (سجدہ:32) کی کس آیت نمبر پر سجدہ واجب ہے؟


Answer-1: سورہ الم تنزیل الکتبٰ (سجدہ:32) کی آیت نمبر 15 کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:عروۃالوثقیٰ | Page:239 | volume:2


Answer-2: سورہ الم تنزیل الکتبٰ (سجدہ:32) کی آیت نمبر 15 کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:عروۃالوثقیٰ | Page:239 | volume:2


Answer-3: سورہ الم تنزیل الکتبٰ (سجدہ:32) کی آیت نمبر 15 کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:عروۃالوثقیٰ | Page:239 | volume:2


Answer-4: سورہ الم تنزیل الکتبٰ (سجدہ:32) کی آیت نمبر 15 کی تلاوت کرنے یا سننے پر سجدہ کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:منھاج الصالحین | Page:194 | volume:2



137

Category : طہارت

Question : قلیل پانی کیا ہے؟


Answer-1: ایسا پانی جو زمین سے نہ پھوٹے اور کُر سے کم ہو قلیل پانی کہلاتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:12 | volume:0


Answer-2: ایسا پانی جو زمین سے نہ پھوٹے اور کُر سے کم ہو قلیل پانی کہلاتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:6 | volume:0


Answer-3: ایسا پانی جو زمین سے نہ پھوٹے اور کُر سے کم ہو قلیل پانی کہلاتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:8 | volume:0


Answer-4: ایسا پانی جو زمین سے نہ پھوٹے اور کُر سے کم ہو قلیل پانی کہلاتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:10 | volume:0



138

Category : طہارت

Question : اگر کوئی نجاست قلیل پانی سے مل جائے تو کیا قلیل پانی نجس ہو جائے گا؟


Answer-1: اگر کوئی نجاست قلیل پانی سے مل جائےتو قلیل پانی نجس ہو جائے گا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:12 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی نجاست قلیل پانی سے مل جائےتو قلیل پانی نجس ہو جائے گا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:6 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی نجاست قلیل پانی سے مل جائےتو قلیل پانی نجس ہو جائے گا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:8 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی نجاست قلیل پانی سے مل جائےتو قلیل پانی نجس ہو جائے گا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:10 | volume:0



139

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : حلال گوشت جانور کا حرام مغز کو جو ریڑھ کی ہڈی میں ہوتا ہے کھاسکتے ہیں؟


Answer-1: جانور کا حرام مغز کو جو ریڑھ کی ہڈی میں ہوتا ہے کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:514 | volume:0


Answer-2: جانور کا حرام مغز کو جو ریڑھ کی ہڈی میں ہوتا ہے کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:418 | volume:0


Answer-3: احتیاط واجب کی بنا پر حرام مغز کو جو ریڑھ کی ہڈی میں ہوتا ہے کھانے سے اجتناب کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:475 | volume:0


Answer-4: احتیاط واجب کی بنا پر حرام مغز کو جو ریڑھ کی ہڈی میں ہوتا ہے کھانے سے اجتناب کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین | Page:390 | volume:3


Answer-5: جانور کا حرام مغز کو جو ریڑھ کی ہڈی میں ہوتا ہے کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:513 | volume:0



140

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : حلال گوشت جانور کی شرمگاہ کھانےکا کیا حکم ہے؟


Answer-1: جانور کی شرمگاہ کو کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:514 | volume:0


Answer-2: جانور کی شرمگاہ کو کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:418 | volume:0


Answer-3: احتیاط واجب کی بنا پر شرمگاہ کو کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:475 | volume:0


Answer-4: احتیاط واجب کی بنا پر شرمگاہ کو کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین | Page:390 | volume:3


Answer-5: جانور کی شرمگاہ کو کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:513 | volume:0



141

Category : نماز

Question : پکنک یا ساحل سمندر پر اگر قبلے کی سمت معلوم نہ ہو اور تحقیق بھی ممکن نہ ہو تو نماز کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر کسی کو قبلے کا علم نہ ہو اور تحقیق بھی ممکن نہ ہو تو جس سمت قبلے کا گمان ہو اس سمت نماز ادا کرے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:156 | volume:0


Answer-2: اگر کسی کو قبلے کا علم نہ ہو اور تحقیق بھی ممکن نہ ہو تو جس سمت قبلے کا گمان ہو اس سمت نماز ادا کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:126 | volume:0


Answer-3: اگر کسی کو قبلے کا علم نہ ہو اور تحقیق بھی ممکن نہ ہو تو جس سمت قبلے کا گمان ہو اس سمت نماز ادا کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:139 | volume:0


Answer-4: اگر کسی کو قبلے کا علم نہ ہو اور تحقیق بھی ممکن نہ ہو تو جس سمت قبلے کا گمان ہو اس سمت نماز ادا کرے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:145 | volume:0



142

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : حلال گوشت جانور کے پٹھے کو جو ریڑھ کی ہڈی کے دونوں طرف ہوتے ہیں کھانے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: احتیاط واجب کی بنا پر جانور کے پٹھے کو جو ریڑھ کی ہڈی کے دونوں طرف ہوتے ہیں کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:514 | volume:0


Answer-2: جانور کے وہ پٹھے کو جو ریڑھ کی ہڈی کے دونوں طرف ہوتے ہیں کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:418 | volume:0


Answer-3: احتیاط کی بنا پر جانورکےوہ پٹھے جو ریڑھ کی ہڈی کے دونوں طرف ہوتے ہیں ،کو کھانے سے اجتناب کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:475 | volume:0


Answer-4: احتیاط کی بنا پر جانورکےوہ پٹھے جو ریڑھ کی ہڈی کے دونوں طرف ہوتے ہیں ،کو کھانے سے اجتناب کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین | Page:390 | volume:3


Answer-5: احتیاط واجب کی بنا پر جانور کے پٹھے کو جو ریڑھ کی ہڈی کے دونوں طرف ہوتے ہیں کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:513 | volume:0



143

Category : روزہ

Question : روزے کی حالت میں سر اور سینے کےبلغم کو نگلناکیسا ہے اور اگر منہ میں آجائے تو کیا حکم ہے؟


Answer-1: روزے کی حالت میں اگر سر اور سینے کا بلغم منہ کے اندر والے حصے تک نہ پہنچے تو اسے نگلنے میں کوئی حرج نہیں اور اگر منہ میں آجائے تو احتیاط مستحب یہ ہے کہ اسے نہ نگلے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:297 | volume:0


Answer-2: روزے کی حالت میں اگر سر اور سینے کا بلغم منہ کے اندر والے حصے تک نہ پہنچےتو اسے نگلنے میں کوئی حرج نہیں اور اگر منہ میں آجائے تو احتیاط واجب یہ ہے کہ اسے نہ نگلے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:242 | volume:0


Answer-3: روزے کی حالت میں اگر سر اور سینے کا بلغم منہ کے اندر والے حصے تک نہ پہنچے تو اسے نگلنے میں کوئی حرج نہیں اور اگر منہ میں آجائے تو احتیاط واجب یہ ہے کہ اسے نہ نگلے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:273 | volume:0


Answer-4: روزے کی حالت میں اگر سر اور سینے کا بلغم منہ کے اندر والے حصے تک نہ پہنچے تو اسے نگلنے میں کوئی حرج نہیں اور اگر منہ میں آجائے تو احتیاط واجب یہ ہے کہ اسے نہ نگلے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:280 | volume:0



144

Category : روزہ

Question : جس شخص پر مضان کا قضاروزہ واجب ہو کیا وہ مستحب روزہ رکھ سکتا ہے؟


Answer-1: جس شخص پر ماہِ مبارک رمضان کے قضا روزے ہوں وہ مستحب روزے نہیں رکھ سکتا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:منھاج الصالحین | Page:311 | volume:1


Answer-2: جس شخص پر ماہِ مبارک رمضان کے قضا روزے ہوں وہ مستحب روزے نہیں رکھ سکتا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:تحریر الوسیلہ | Page:268 | volume:1


Answer-3: جس شخص پر ماہِ مبارک رمضان کے قضا روزے ہوں وہ مستحب روزے نہیں رکھ سکتا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین | Page:294 | volume:2


Answer-4: جس شخص پر ماہِ مبارک رمضان کے قضا روزے ہوں وہ مستحب روزے نہیں رکھ سکتا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:منھاج الصالحین | Page:294 | volume:2



145

Category : روزہ

Question : وطن سے کتنا فاصلہ طے کرنے کے بعد انسان پر مسافر کے احکام جاری ہوتے ہیں؟یعنی نماز قصر پڑھے گا اور روزہ ختم ہو جائے گا؟


Answer-1: شہر سے اتنا فاصلہ جس کے بعد اہلِ شہر حتی وہ افراد جو شہر کے مضافات میں رہتے ہیں مسافر کو نہ دیکھ سکیں اور اس کی علامت یہ ہے کہ وہ اہلِ شہر کو نہ دیکھ سکے حد ترخص کہلاتا ہے جس کے بعد شخص پر مسافر کے احکام جاری ہوتے ہیں۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:256 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی شخص آٹھ فرسخ سفر کرنے کا ارادہ رکھتا ہو اور شہر سے یا اس جگہ سے جہاں دس روز رکنے کا ارادہ ہو اتنا دور چلا جائے کے اگر رکاوٹ نہ ہو تو وہاں سے شہر کی دیوار نظر نہ آئے اور اذان کی آواز سنائی نہ دے۔اس فاصلے کو حدِ ترخص کہاجاتا ہےیہاں سے مسافر کے احکام جاری ہونگے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:208 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی شخص آٹھ فرسخ سفر کرنے کا ارادہ رکھتا ہو اور شہر سے اتنا دور چلا جائے کہ شہر والے اسے نہ دیکھ سکیں اس کی پہچان یہ ہے کہ وہ شہر والوں کو نہ دیکھ سکے اور شہر کی اذان نہ سن سکے اسے حد ترخص کہتے ہیں جس کے بعد مسافر کے احکام جاری ہونگے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:224 | volume:0


Answer-4: جو شخص آٹھ فرسخ سفر کرنے کا ارادہ رکھتا ہو اور شہر سے اتنا دور چلا جائے کہ وہاں کی اذان نہ سنے اور اور اگر کوئی شہر والوں کو نہ دیکھ رہا ہو تو یقیناً وہ حد ِترخص تک پہنچ چکا ہےاس پر مسافر کے احکام جاری ہونگے لیکن یہ ضروری ہے کہ دیکھنے میں کوئی رکاوٹ نہ ہو۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:238 | volume:0



146

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : گدھے کا گوشت کھانے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: گدھے کا گوشت کھانا مکروہ ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:515 | volume:0


Answer-2: گدھے کا گوشت کھانا مکروہ ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:420 | volume:0


Answer-3: گدھے کا گوشت کھانا مکروہ ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:476 | volume:0


Answer-4: گدھے کا گوشت کھانا مکروہ ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:514 | volume:0



147

Category : طہارت

Question : جب کسی نجاست کودور کرنےکے بعد قلیل پانی پاک کرنے کی غرض سے ڈالا جائے تو کیایہ پانی جدا ہونے کے بعدنجس ہوگا؟


Answer-1: جب کسی نجاست کو دور کرنے کے بعد قلیل پانی پاک کرنے کی غرض سے ڈالا جائے تو یہ پانی احتیاط لازم کی بنا پر جدا ہونے کے بعد نجس ہی رہے گا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:12 | volume:0


Answer-2: جب کسی نجاست کو دور کرنے کے بعد قلیل پانی پاک کرنے کی غرض سے ڈالا جائے تو یہ پانی جدا ہونے کے بعد نجس ہی رہے

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:7 | volume:0


Answer-3: نجاست دور کرنے کے بعد قلیل پانی جس جگہ پر ڈالا گیا ہو اگر وہ نجاست ایسی ہو کہ ایک مرتبہ پانی پہنچانے سے پاک ہو جاتی ہو تو اس جگہ سے نکلنے والا پانی بھی پاک ہوگا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:9 | volume:0


Answer-4: جب کسی نجاست کو دور کرنے کے بعد قلیل پانی پاک کرنے کی غرض سے ڈالا جائے تو یہ پانی جدا ہونے کے بعداحتیاط واجب کی بنا پر نجس ہی رہے

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:11 | volume:0



148

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : آیا زندہ مچھلی کھانا جائز ہے؟


Answer-1: زندہ مچھلی کھانا جائز ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:513 | volume:0


Answer-2: زندہ مچھلی کھانا جائز ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:418 | volume:0


Answer-3: زندہ مچھلی کھانا جائز ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:473 | volume:0


Answer-4: زندہ مچھلی کھانا جائز ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:512 | volume:0



149

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : کونسی مچھلی کھانا حلال ہے؟


Answer-1: جو مچھلی اپنی خلقت کے لحاظ سے چھلکے دار ہو وہ حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:512 | volume:0


Answer-2: چھلکے دار مچھلی حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:418 | volume:0


Answer-3: چھلکے دار مچھلی حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:472 | volume:0


Answer-4: چھلکے دار مچھلی حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:511 | volume:0



150

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : مور کا گوشت کھانے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: مور کا گوشت کھانا حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:514 | volume:0


Answer-2: مور کا گوشت کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:تحریر الوسیلہ | Page:138 | volume:2


Answer-3: مور کا گوشت کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:475 | volume:0


Answer-4: مور کا گوشت کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:513 | volume:0



151

Category : طہارت

Question : جاری پانی کسے کہتے ہیں؟


Answer-1: ایسا پانی جس کا قدرتی منبع ہو اور جاری ہو اور اسمیں کسی حد تک تسلسل ہو جاری پانی کہلاتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:12 | volume:0


Answer-2: ایسا پانی جو زمین سے پھوٹے اور جاری ہو جائے جاری پانی کہلاتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:7 | volume:0


Answer-3: ایسا پانی جو زمین سے پھوٹے اور جاری ہو جائے جاری پانی کہلاتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:9 | volume:0


Answer-4: ایسا پانی جو زمین سے پھوٹے اور جاری ہو جائے جاری پانی کہلاتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:11 | volume:0



152

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : کوے کا گوشت کھانے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: کوے کا گوشت حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:514 | volume:0


Answer-2: کوے کا گوشت حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:تحریر الوسیلہ | Page:139 | volume:2


Answer-3: کوے کا گوشت حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:475 | volume:0


Answer-4: کوے کا گوشت حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:513 | volume:0



153

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : چیل کا گوشت حلال ہے؟


Answer-1: چیل کا گوشت حرام ہے

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:514 | volume:0


Answer-2: چیل کا گوشت حرام ہے

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:419 | volume:0


Answer-3: چیل کا گوشت حرام ہے

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:475 | volume:0


Answer-4: چیل کا گوشت حرام ہے

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:513 | volume:0



154

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : خرگوش کھانے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: خرگوش کھانا حرام ہے ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:منھاج الصالحین | Page:292 | volume:3


Answer-2: خرگوش کھانا حرام ہے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:تحریر الوسیلہ | Page:138 | volume:2


Answer-3: خرگوش کھانا حرام ہے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین مع فتاوی وحید الخراسانی | Page:388 | volume:3


Answer-4: خرگوش کھانا حرام ہے ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:منھاج الصالحین مع فتاوی وحید الخراسانی | Page:388 | volume:3



155

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : چکور کا گوشت کھانا کیسا ہے؟


Answer-1: چکور کا گوشت حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:503 | volume:0


Answer-2: چکور کا گوشت حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:410 | volume:0


Answer-3: چکور کا گوشت حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:464 | volume:0


Answer-4: چکور کا گوشت حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:503 | volume:0



156

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : کیا چڑیا کا گوشت حلال ہے؟


Answer-1: چڑیا کا گوشت حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:514 | volume:0


Answer-2: چڑیا کا گوشت حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:تحریر الوسیلہ | Page:138 | volume:2


Answer-3: چڑیا کا گوشت حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:475 | volume:0


Answer-4: چڑیا کا گوشت حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:513 | volume:0



157

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : بلبل کا گوشت کھانے کا کیا حکم ہے ؟


Answer-1: بلبل کا گوشت حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:منھاج الصالحین | Page:293 | volume:3


Answer-2: بلبل کا گوشت حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:تحریر الوسیلہ | Page:138 | volume:2


Answer-3: بلبل کا گوشت حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:475 | volume:0


Answer-4: بلبل کا گوشت حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:513 | volume:0



158

Category : طہارت

Question : اگر پانی اوپر سے نیچے کی جانب جاری ہو اور کر سے کم ہو جب کے پانی کے نیچے والے حصے سے نجاست مل جائے تو اوپر والے حصے کے بارے میں کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر پانی اوپر سے نیچے کی جانب جاری ہو اور کر سے کم ہو جب کے پانی کے نیچے والے حصے سے نجاست مل جائے تو پانی کا اْپری حصہ پاک ہی رہے گا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:13 | volume:0


Answer-2: اگر جاری پانی اوپر سے نیچے کی جانب فشار کے ساتھ آرہا ہو اور کر سے کم ہو جب کے نجاست نیچے والے حصے سے مل جائے تو پانی کااوپری حصہ پاک ہی رہے گا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:8 | volume:0


Answer-3: اگر جاری پانی اوپر سے نیچے کی جانب فشار کے ساتھ آرہا ہو اور کر سے کم ہو جب کے نجاست نیچے والے حصے سے مل جائے تو پانی کا اوپری حصہ پاک ہی رہے گا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:10 | volume:0


Answer-4: اگر جاری پانی اوپر سے نیچے کی جانب فشار کے ساتھ آرہا ہو اور کر سے کم ہو جب کے نجاست نیچے والے حصے سے مل جائے تو پانی کا اوپری حصہ پاک ہی رہے گا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:12 | volume:0



159

Category : طہارت

Question : ایسا چشمہ جو جاری نہ ہو لیکن جب چشمے سے پانی لیا جائے تو وہ ابل پڑے تو کیا چشمے کے پانی پر جاری پانی کا حکم جاری ہوگا؟


Answer-1: ایسا چشمہ جو جاری نہ ہو لیکن جب چشمے سے پانی لیا جائے تو وہ ابل پڑے تو ایسے چشمے کے پانی پر جاری پانی کا حکم جاری نہیں ہو گا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:13 | volume:0


Answer-2: ایسا چشمہ جو جاری نہ ہو لیکن جب چشمے سے پانی لیا جائے تو اس کا پانی ابل پڑے تو ایسے چشمے پر جاری پانی کا حکم جاری ہوگا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:7 | volume:0


Answer-3: ایسا چشمہ جو جاری نہ ہو لیکن جب چشمے سے پانی لیا جائے تو اس کا پانی ابل پڑے تو ایسے چشمے پر جاری پانی کا حکم جاری ہوگا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:9 | volume:0


Answer-4: ایسا چشمہ جو جاری نہ ہو لیکن جب چشمے سے پانی لیا جائے تو اس کا پانی ابل پڑے تو ایسے چشمے پر جاری پانی کا حکم جاری ہوگا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:11 | volume:0



160

Category : طہارت

Question : جس سڑک پر عینی نجاست نہ ہو لیکن نجس ہو تو کیا بارش کے برسنے سے وہ سڑک پاک ہوجائیگی؟


Answer-1: اگر سڑک پر عین نجاست نہ ہو لیکن نجس ہو تو اس پر بارش کے برسنے سے وہ جگہ پاک ہو جائیگی۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:14 | volume:0


Answer-2: اگر سڑک پر عین نجاست نہ ہو لیکن نجس ہو تو اس پر بارش کے برسنے سے وہ جگہ پاک ہو جائیگی۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:8 | volume:0


Answer-3: اگر سڑک پر عین نجاست نہ ہو لیکن نجس ہو تو اس پر بارش کے برسنے سے وہ جگہ پاک ہو جائیگی۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:10 | volume:0


Answer-4: اگر سڑک پر عین نجاست نہ ہو لیکن نجس ہو تو اس پر بارش کے برسنے سے وہ جگہ پاک ہو جائیگی۔لیکن احتیاط واجب کی بنا پر اتنی بارش برسے کہ پانی جاری ہوجائے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:12 | volume:0



161

Category : طہارت

Question : اگر کپڑوں کو بارش کے پانی میں پاک کیا جائے تو کیا کپڑوں کا نچوڑنا ضروری ہے؟


Answer-1: اگر کپڑوں کو بارش میں پاک کیا جائے تو ایسی صورت میں نچوڑنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:14 | volume:0


Answer-2: اگر کپڑوں کو بارش میں پاک کیا جائے تو ایسی صورت میں نچوڑنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:8 | volume:0


Answer-3: اگر کپڑوں کو بارش میں پاک کیا جائے تو ایسی صورت میں نچوڑنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:10 | volume:0


Answer-4: اگر کپڑوں کو بارش میں پاک کیا جائے تو ایسی صورت میں نچوڑنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:12 | volume:0



162

Category : طہارت

Question : نجس چیز کو پاک کرنے کیلئے کتنی بارش ہونی چاہیے؟


Answer-1: نجس چیز کو پاک کرنے کیلئے اتنی بارش ہونا ضروری ہے کہ لوگ کہیں کہ بارش برسی ہے دوتین قطروں کا برسنا کافی نہیں۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:14 | volume:0


Answer-2: نجس چیز کو پاک کرنے کیلئے اتنی بارش ہونا ضروری ہے کہ لوگ کہیں کہ بارش برسی ہے دوتین قطروں کا برسنا کافی نہیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:8 | volume:0


Answer-3: نجس چیز کو پاک کرنے کیلئے اتنی بارش ہونا ضروری ہے کہ لوگ کہیں کہ بارش برسی ہے دوتین قطروں کا برسنا کافی نہیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:10 | volume:0


Answer-4: نجس چیز کو پاک کرنے کیلئے اتنی بارش ہونا ضروری ہے کہ لوگ کہیں کہ بارش برسی ہے دوتین قطروں کا برسنا کافی نہیں۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:12 | volume:0



163

Category : طہارت

Question : اگر بارش کسی عین نجس پر برسے اور پھر پانی دوسری جگہ پہنچ جائے تو اس پانی کے پاک ہونے کے بارے میں کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر بارش کا پانی عین نجس پر برسے اور برس کر دوسری جگہ پہنچ جائے اور عین نجاست اسمیں شامل نہ ہو اور نجاست سےپانی کا رنگ ،بو، زائقہ تبدیل نہ ہو تو پاک ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:14 | volume:0


Answer-2: اگر بارش کا پانی عین نجس پر برسے اور برس کر دوسری جگہ پہنچ جائے اور عین نجاست اسمیں شامل نہ ہو اور نجاست سے پانی کا رنگ ،بو، زائقہ تبدیل نہ ہو تو پاک ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:8 | volume:0


Answer-3: اگر بارش کا پانی عین نجس پر برسے اور برس کر دوسری جگہ پہنچ جائے اور عین نجاست اسمیں شامل نہ ہو اور نجاست سےپانی کا رنگ ،بو، زائقہ تبدیل نہ ہو تو پاک ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:10 | volume:0


Answer-4: اگر بارش کا پانی عین نجس پر برسے اور برس کر دوسری جگہ پہنچ جائے اور عین نجاست اسمیں شامل نہ ہو اور نجاست سے پانی کا رنگ ،بو، زائقہ تبدیل نہ ہو تو پاک ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:12 | volume:0



164

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : چمگادڑکا گوشت کھانے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: چمگادڑ کا گوشت حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:514 | volume:0


Answer-2: چمگادڑ کا گوشت حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:تحریر الوسیلہ | Page:138 | volume:2


Answer-3: چمگادڑ کا گوشت حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین مع فتاوی وحید الخراسانی | Page:390 | volume:3


Answer-4: چمگادڑ کا گوشت حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:منھاج الصالحین مع فتاوی وحید الخراسانی | Page:390 | volume:3



165

Category : حج

Question : احرام میں ردا /چادر کا کپڑا کتنا ہونا چاہیے؟


Answer-1: احتیاط واجب کی بنا پر احرام میں ردا کا کپڑا اتنا ہو کہ دونوں کندھے ،بازو اور کمر کا قابل توجہ حصہ اس سے ڈھنپ جائے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:143 | volume:0


Answer-2: احرام میں ردا کا کپڑا متعارف اندازے کا ہونا کفایت کرتاہے البتہ احتیاط مستحب کی بنا پر اتنا ہو کہ دونوں کندھے ڈھنپ جائیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:106 | volume:0


Answer-3: احرام میں ردا کا کپڑا متعارف اندازے کا ہونا کفایت کرتا ہےالبتہ احتیاط مستحب کی بنا پر اتنا ہو کہ دونوں کندھے ڈھنپ جائیں۔

Scholar:آیت اللہ سید علی خامنہ ای | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:106 | volume:0


Answer-4: احتیاط واجب کی بنا پراحرام میں ردا کا کپڑا اتنا ہو کہ دونوں کندھے ،بازو اور کمر کا قابل توجہ حصہ اس سے ڈھنپ جائے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:103 | volume:0



166

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : فاختہ کھانے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: فاختہ کا گوشت کھانا مکروہ ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین مع فتاوی وحید الخراسانی | Page:390 | volume:3


Answer-2: فاختہ کا گوشت کھانا مکروہ ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:منھاج الصالحین مع فتاوی وحید الخراسانی | Page:390 | volume:3



167

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : جھینگا کھانے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: جھینگا حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:منھاج الصالحین | Page:291 | volume:3


Answer-2: جھینگا حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:تحریر الوسیلہ | Page:137 | volume:2


Answer-3: جھینگا حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین | Page:387 | volume:3


Answer-4: جھینگا حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:منھاج الصالحین | Page:387 | volume:3



168

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : کیکڑے کھانے کا کیاحکم ہے؟


Answer-1: کیکڑا حرام ہے

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:منھاج الصالحین | Page:291 | volume:3


Answer-2: کیکڑا حرام ہے

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:تحریر الوسیلہ | Page:137 | volume:2


Answer-3: کیکڑا حرام ہے

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین | Page:387 | volume:3


Answer-4: کیکڑا حرام ہے

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:منھاج الصالحین | Page:387 | volume:3



169

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : اگر انگور کے رس کو پکانے سے ابال آجائے تو اسکو پینا کیسا ہے؟


Answer-1: اگر انگور کے رس کو پکانے سے ابال آجائے تو اسکا پینا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:25 | volume:0


Answer-2: اگر انگور کے رس کو پکانے سے ابال آجائے تو اسکا پینا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:18 | volume:0


Answer-3: اگر انگور کے رس کو پکانے سے ابال آجائے تو اسکا پینا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:20 | volume:0


Answer-4: اگر انگور کے رس کو پکانے سے ابال آجائے تو اسکا پینا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:22 | volume:0



170

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : نشہ آور چیزوں کا استعمال کیسا ہے؟


Answer-1: نشہ آور چیزیں حرام ہیں۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:منھاج الصالحین | Page:304 | volume:3


Answer-2: نشہ آور چیزیں حرام ہیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:تحریر الوسیلہ | Page:147 | volume:2


Answer-3: نشہ آور چیزیں حرام ہیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین | Page:391 | volume:3


Answer-4: نشہ آور چیزیں حرام ہیں۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:منھاج الصالحین | Page:391 | volume:3



171

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : اگر زندہ گوسفند کی چکی کاٹ کر اسکو کھایا جائے تو کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر زندہ گوسفند سے چکی کاٹی جائے تو اسکا کھانا حرام ہے ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:514 | volume:0


Answer-2: اگر زندہ گوسفند سے چکی کاٹی جائے تو اسکا کھانا حرام ہے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:419 | volume:0


Answer-3: اگر زندہ گوسفند سے چکی کاٹی جائے تو اسکا کھانا حرام ہے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:475 | volume:0


Answer-4: اگر زندہ گوسفند سے چکی کاٹی جائے تو اسکا کھانا حرام ہے ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:513 | volume:0



172

Category : طہارت

Question : اگر زمین نجس ہو اور اس پر قالین بچھا ہوا ہو اور بارش برسے تو قالین کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر نجس زمین پر پاک قالین بچھا ہوا ہو اوربارش برسے اوربارش کے دوران بارش کا پانی زمین تک پہنچ جائے تو قالین بھی نجس نہیں ہو گا اور زمین بھی پاک ہوجائے گی۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:14 | volume:0


Answer-2: اگر نجس زمین پر پاک قالین بچھا ہوا ہو اوربارش برسے اور بارش کا پانی زمین پر جاری ہو جائے تو قالین بھی نجس نہیں ہو گا اور زمین بھی پاک ہوجائے گی۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:9 | volume:0


Answer-3: اگر نجس زمین پر پاک قالین بچھا ہوا ہو اوربارش برسے اور بارش کا پانی زمین پر جاری ہو جائے تو قالین بھی نجس نہیں ہو گا اور زمین بھی پاک ہوجائے گی۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:11 | volume:0


Answer-4: اگر نجس زمین پر پاک قالین بچھا ہوا ہو اوربارش برسے اور بارش کا پانی زمین تک پہنچ جائے تو قالین بھی نجس نہیں ہو گا اور زمین بھی پاک ہوجائے گی۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:13 | volume:0



173

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : اگر گائے کو شرعی طور پر ذبح کیا جائے اور اس کے پیٹ میں بچہ مر جائے تو اس بچے کو کھانا کیسا ہے؟


Answer-1: اگر گائے کو شرعی طور پر ذبح کیا ہو اور اس کے پیٹ میں موجود بچے کی خلقت تمام ہو اور وہ گائے کے ذبح سے پہلے نہ مرا ہو اورنکالنے میں معمول سے زیادہ دیر کی وجہ سے نہ مرا ہو تو اسکا کھانا حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:منھاج الصالحین | Page:283 | volume:3


Answer-2: اگر گائے کو شرعی طور پر ذبح کیا ہو اوراسکے پیٹ سے مردہ بچہ نکلے اور بچے کی خلقت تمام ہو اور اسکے بال یا روئے نکل آئے ہوں تو اسکا کھاناحلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:تحریر الوسیلہ | Page:134 | volume:2


Answer-3: اگر گائے کو شرعی طور پر ذبح کیا ہو اور بچے کی خلقت تمام ہواور اسکی موت شکم سے نکلنے سے پہلے ہو تو اسکا کھانا حلال ہے۔بشرطیکہ اس کو پیٹ سے نکالنے میں معمول سے زیادہ دیر نہ کی ہو۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین | Page:382 | volume:3


Answer-4: اگر گائے کو شرعی طور پر ذبح کیا ہو اور بچے کی خلقت تمام ہواور اسکی موت شکم سے نکلنے سے پہلے ہو تو اسکا کھانا حلال ہے۔بشرطیکہ اس کو پیٹ سے نکالنے میں معمول سے زیادہ دیر نہ کی ہو۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:منھاج الصالحین | Page:382 | volume:3



174

Category : کھانے پینے کے احکام

Question : جس دسترخوان پر شراب پی جارہی ہو اس دسترخوان سے کوئی چیز کھانے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: جس دسترخوان پر شراب پی جارہی ہو اس سے کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:516 | volume:0


Answer-2: جس دسترخوان پر شراب پی جارہی ہو اس سے کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:تحریر الوسیلہ | Page:151 | volume:2


Answer-3: جس دسترخوان پر شراب پی جارہی ہو اس سے کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین | Page:393 | volume:3


Answer-4: جس دسترخوان پر شراب پی جارہی ہواوریہ شخص بھی ان میں شمار ہو تواس سے کھانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:515 | volume:0



175

Category : طہارت

Question : اگر جاری پانی میں سے کوئی نجاست شامل ہو جائے اور وہ حصہ کر سے کمتر ہو کیا پانی نجس ہوجائے گا؟


Answer-1: جاری پانی کاوہ حصہ جس سے نجاست آکے ملی ہے اگر چہ کر سے کم ہو جب تک نجاست کی وجہ سے اس پانی کا رنگ ،بویا زائقہ تبدیل نہ ہو جائے پاک رہے گا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:13 | volume:0


Answer-2: جاری پانی کاوہ حصہ جس سے نجاست آکے ملی ہے اگر چہ کر سے کم ہو جب تک نجاست کی وجہ سے اس پانی کا رنگ، بویا زائقہ تبدیل نہ ہو جائے پاک رہے گا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:7 | volume:0


Answer-3: جاری پانی کاوہ حصہ جس سے نجاست آکے ملی ہے اگر چہ کر سے کم ہو جب تک نجاست کی وجہ سے اس پانی کا رنگ، بویا زائقہ تبدیل نہ ہو جائے پاک رہے گا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:9 | volume:0


Answer-4: جاری پانی کاوہ حصہ جس سے نجاست آکے ملی ہے اگر چہ کر سے کم ہو جب تک نجاست کی وجہ سے اس پانی کا رنگ،بویا زائقہ تبدیل نہ ہو جائے پاک رہے گا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:11 | volume:0



176

Category : حج

Question : کیا خواتین احرام کے علاوہ ریشم کا لباس پہن سکتی ہیں؟


Answer-1: احتیاط واجب کی بنا پر خواتین احرام کی حالت میں کوئی چیز بھی ریشم کی نہ پہنیں مگر مجبوری کی بنا پر جیسے سردی یا گرمی سے محفوظ رہنے کے لئے وغیرہ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:145 | volume:0


Answer-2: احتیاط واجب کی بنا پر خواتین احرام کی حالت میں کوئی چیز بھی ریشم کی نہ پہنیں مگر مجبوری کی بنا پر جیسے سردی یا گرمی سے محفوظ رہنے کے لئے وغیرہ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:107 | volume:0


Answer-3: احتیاط واجب کی بنا پر خواتین احرام کی حالت میں کوئی چیز بھی ریشم کی نہ پہنیں مگر مجبوری کی بنا پر جیسے سردی یا گرمی سے محفوظ رہنے کے لئے وغیرہ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:117 | volume:0


Answer-4: احتیاط واجب کی بنا پر خواتین احرام کی حالت میں کوئی چیز بھی ریشم کی نہ پہنیں مگر مجبوری کی بنا پر جیسے سردی یا گرمی سے محفوظ رہنے کے لئے وغیرہ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:104 | volume:0


Answer-5: احتیاط واجب کی بنا پر خواتین احرام کی حالت میں کوئی چیز بھی ریشم کی نہ پہنیں مگر مجبوری کی بنا پر جیسے سردی یا گرمی سے محفوظ رہنے کے لئے وغیرہ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی خامنہ ای | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:107 | volume:0



177

Category : روزہ

Question : کیا روزے کی نیت کا زبان سے ادا کرنا ضروری ہے؟


Answer-1: روزے کی نیت کا زبان سے ادا کرنا ضروری نہیں ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:292 | volume:0


Answer-2: روزے کی نیت کا زبان سے ادا کرنا ضروری نہیں ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:239 | volume:0


Answer-3: روزے کی نیت کا زبان سے ادا کرنا ضروری نہیں ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:268 | volume:0


Answer-4: روزے کی نیت کا زبان سے ادا کرنا ضروری نہیں ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:275 | volume:0



178

Category : روزہ

Question : رمضان کے روزے کی نیت کب تک کرلینا ضروری ہے؟


Answer-1: احتیاط واجب کی بنا پراذان صبح سے پہلے تک رمضان کے روزے کی نیت کرنا ضروری ہے ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:292 | volume:0


Answer-2: اذان صبح سے پہلےتک رمضان کے روزے کی نیت کرنا ضروری ہے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:238 | volume:0


Answer-3: اذان صبح سے پہلے تک رمضان کے روزے کی نیت کرنا ضروری ہے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:268 | volume:0


Answer-4: اذان صبح سے پہلے تک رمضان کے روزے کی نیت کرنا ضروری ہے ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:275 | volume:0



179

Category : فطرہ

Question : کیا فطرہ کے طور پر رقم دی جاسکتی ہے؟


Answer-1: فطرہ کے طور پر تین کلو غذا کی رقم دی جاسکتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:371 | volume:0


Answer-2: فطرہ کے طور پر تین کلو غذا کی رقم دی جاسکتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:303 | volume:0


Answer-3: فطرہ کے طور پر تین کلو غذا کی رقم دی جاسکتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:341 | volume:0


Answer-4: فطرہ کے طور پر تین کلو غذا کی رقم دی جاسکتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:352 | volume:0



180

Category : فطرہ

Question : کتنا فطرہ دینا واجب ہے؟ٍ


Answer-1: ہر فرد کے اعتبار سے تقریباً تین کلو شہر میں استعمال ہونے والی غذا کا فطرہ کے طور پر دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:371 | volume:0


Answer-2: ہر فرد کے اعتبار سے تقریباً تین کلو گندم، جو، کھجور، کشمش، چاول وغیرہ فقیر کو دے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:303 | volume:0


Answer-3: ہر فرد کے اعتبار سے تقریباً تین کلو گندم، جو، کھجور، کشمش، چاول وغیرہ فقیر کو دے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:341 | volume:0


Answer-4: ہر فرد کے اعتبار سے تقریباً تین کلو گندم، جو، کھجور، کشمش، چاول وغیرہ فقیر کو دے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:352 | volume:0



181

Category : فطرہ

Question : کن افراد کا فطرہ دینا واجب ہے؟


Answer-1: جو شخص بھی آپ کے دسترخوان پر کھانے والا شمار ہوتا ہو اسکا فطرہ اور اپنا فطرہ دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:371 | volume:0


Answer-2: جو شخص بھی آپ کے دسترخوان پر کھانے والا شمار ہوتا ہو اسکا فطرہ اور اپنا فطرہ دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:303 | volume:0


Answer-3: جو شخص بھی آپ کے دسترخوان پر کھانے والا شمار ہوتا ہو اسکا فطرہ اور اپنا فطرہ دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:341 | volume:0


Answer-4: جو شخص بھی آپ کے دسترخوان پر کھانے والا شمار ہوتا ہو اسکا فطرہ اور اپنا فطرہ دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:352 | volume:0



182

Category : فطرہ

Question : کس شخص پر فطرہ دینا واجب ہے؟


Answer-1: جو شخص عیدالفطر کی شب،غروب آفتاب کے وقت بالغ،عاقل ہو اور بیھوش ،فقیر اور غلام نہ ہو اس پر فطرہ دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:371 | volume:0


Answer-2: جو شخص عیدالفطر کی شب،غروب آفتاب کے وقت بالغ،عاقل ہو اور بیھوش ،فقیر اور غلام نہ ہو اس پر فطرہ دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:303 | volume:0


Answer-3: جو شخص عیدالفطر کی شب،غروب آفتاب کے وقت بالغ،عاقل ہو اور بیھوش ،فقیر اور غلام نہ ہو اس پر فطرہ دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:341 | volume:0


Answer-4: جو شخص عیدالفطر کی شب،غروب آفتاب کے وقت بالغ،عاقل ہو اورفقیر اور غلام نہ ہو اس پر فطرہ دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:352 | volume:0



183

Category : فطرہ

Question : کیا آٹایا چاول یا انکی رقم فطرہ کے طور پر دینا ضروری ہے؟


Answer-1: اگر آٹا یا چاول شہر میں رائج غذا ہوں تو فطرہ میں دی جاسکتی ہیں اور انکی قیمت بھی دی جاسکتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:391 | volume:0


Answer-2: آٹا،چاول،جو،کشمش،کھجور اور ان جیسی چیزیں فطرہ کے طور پر دی جاسکتی ہیں۔اور انکی قیمت بھی دی جاسکتی ہے

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:303 | volume:0


Answer-3: آٹا،چاول،جو،کشمش،کھجور اور ان جیسی چیزیں فطرہ کے طور پر دی جاسکتی ہیں۔اور انکی قیمت بھی دی جاسکتی ہے

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:341 | volume:0


Answer-4: آٹا،چاول،جو،کشمش،کھجور اور ان جیسی چیزیں فطرہ کے طور پر دی جاسکتی ہیں۔اور انکی قیمت بھی دی جاسکتی ہے

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:352 | volume:0



184

Category : روزہ

Question : کیا ایک شہر میں چاند کا نظر آنا دوسرے شہر والوں کے لئے بھی اول ماہ ثابت کردیتا ہے؟


Answer-1: اگر کسی شہر میں چاند نظر آجائے تو وہ شہر جو اسکے ہم افق ہیں ان میں بھی چاند ثابت ہوجائے گا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:320 | volume:0


Answer-2: اگر کسی شہر میں چاند نظر آجائے تو وہ شہر جو اسکے نذدیک ہیں یا اسکے ہم افق ہیں ان میں بھی چاند ثابت ہوجائے گا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:263 | volume:0


Answer-3: اگر کسی شہر میں چاند نظر آجائے تو ہر اس شہر میں جو اسکے ساتھ رات میں شریک ہیں ان میں بھی چاند ثابت ہوجائے گا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:297 | volume:0


Answer-4: اگر کسی شہر میں چاند نظر آجائے تو ہر اس شہر میں جو اسکے ساتھ رات کے اکثر حصے میں شریک ہیں ان میں بھی چاند ثابت ہوجائے گا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:302 | volume:0



185

Category : چاند

Question : کیا ماہر فلکیات کی پیشن گوئی سے چاند کی پہلی تاریخ ثابت ہو جاتی ہے؟


Answer-1: اگر ماہر فلکیات کی پیشن گوئی سے انسان کو اطمینان حاصل ہو جائے تو چاند کی پہلی تاریخ ثابت ہو جاتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:320 | volume:0


Answer-2: اگر ماہر فلکیات کی پیشن گوئی سے انسان کو یقین حاصل ہو جائے تو چاند کی پہلی تاریخ ثابت ہو جاتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:263 | volume:0


Answer-3: اگر ماہر فلکیات کی پیشن گوئی سے انسان کو اطمینان حاصل ہو جائے تو چاند کی پہلی تاریخ ثابت ہو جاتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:297 | volume:0


Answer-4: اگر ماہر فلکیات کی پیشن گوئی سے انسان کو اطمینان حاصل ہو جائے تو چاند کی پہلی تاریخ ثابت ہو جاتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:302 | volume:0



186

Category : فطرہ

Question : جس شخص کو شب عیدفطر افطار کے لئے دعوت دی جائے کیا اسکا فطرہ دینا واجب ہے؟


Answer-1: جس شخص کو شب عیدفطر افطار کے لئے دعوت دی جائے وہ کھانا کھانے والا شمار نہیں ہوتا۔لہذا اسکا فطرہ دینا واجب نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:371 | volume:0


Answer-2: جس شخص کو شب عیدفطر افطار کے لئے دعوت دی جائے اگر وہ غروب سے پہلے آئے اور آپکا کھانا کھانے والا شمار ہو تو اسکا فطرہ دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:304 | volume:0


Answer-3: جس شخص کو شب عیدفطر افطار کے لئے دعوت دی جائے اگر وہ آپکا کھانا کھانے والا شمار ہواور غروب سے پہلے آئے تو اسکا فطرہ دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:342 | volume:0


Answer-4: جس شخص کو شب عیدفطر افطار کے لئے دعوت دی جائے اگر وہ آپکا کھانا کھانے والا شمار ہواور غروب سے پہلے آئے تو اسکا فطرہ دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:352 | volume:0



187

Category : فطرہ

Question : وہ مہمان جو عید فطر کی رات غروب سے پہلے آئے اسکے فطرہ کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگرعید فطر کی رات غروب سے پہلے آنے والا مہمان آپکے ہاں کھانے والا شمار ہو اور رات گزارےتو اسکا فطرہ دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:371 | volume:0


Answer-2: اگر عید فطر کی رات غروب سے پہلے آنے والا مہمان صاحب خانہ کی رضایت سے آئے اور کھانے والا شمار ہو تو اسکا فطرہ دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:304 | volume:0


Answer-3: اگر عید فطر کی رات غروب سے پہلے آنے والا مہمان جو میزبان کی رضایت سے آئے اوراسکے ہاں کھانے والا شمار ہو تو اسکا فطرہ دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:342 | volume:0


Answer-4: اگر مہمان غروب سے پہلے شب عید الفطر صاحب خانہ کی رضایت سے آئےاورفطرہ واجب ہونے کے وقت کھانے والا شمار ہو تو اس کا فطرہ دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:352 | volume:0



188

Category : فطرہ

Question : اگر عیدالفطر کی رات غروب کے بعد کوئی مہمان آئے تو اسکے فطرہ کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: عیدالفطر کی رات غروب کے بعد آنے والا مہمان اگر آپکے ہاں کھانے والا شمار ہو تو احتیاط واجب کی بنا پر اسکا فطرہ دینا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:371 | volume:0


Answer-2: عیدالفطر کی رات غروب کے بعد آنے والے مہمان کا فطرہ دینا واجب نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:304 | volume:0


Answer-3: عیدالفطر کی رات غروب کے بعد آنے والے مہمان کا فطرہ دینا واجب نہیں ہے۔اگر آپ کے ہاں کھانےوالاشمار نہ ہو۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:342 | volume:0


Answer-4: عیدالفطر کی رات غروب کے بعد آنے والے مہمان کا فطرہ دینا واجب نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:353 | volume:0



189

Category : فطرہ

Question : کیا فقیر شخص پر فطرہ دینا واجب ہے؟


Answer-1: فقیر شخص پر فطرہ دینا واجب نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:371 | volume:0


Answer-2: فقیر شخص پر فطرہ دینا واجب نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:303 | volume:0


Answer-3: فقیر شخص پر فطرہ دینا واجب نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:341 | volume:0


Answer-4: فقیر شخص پر فطرہ دینا واجب نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:352 | volume:0



190

Category : چاند

Question : جس دن شک ہو کہ ۳۰ شعبان ہے یا اول رمضان اس دن روزہ کس نیت سے رکھا جائے گا؟


Answer-1: جس دن شک ہو کہ ۳۰ شعبان ہے یا رمضان کی پہلی تورمضان کی نیت سے روزہ نہیں رکھ سکتے قضا یا مستحب روزے کی نیت کریں۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:295 | volume:0


Answer-2: جس دن شک ہو کہ ۳۰ شعبان ہے یا رمضان کی پہلی تورمضان کی نیت سے روزہ نہیں رکھ سکتے قضا یا مستحب روزے کی نیت کریں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:240 | volume:0


Answer-3: جس دن شک ہو کہ ۳۰ شعبان ہے یا رمضان کی پہلی تورمضان کی نیت سے روزہ نہیں رکھ سکتے قضا یا مستحب روزے کی نیت کریں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:271 | volume:0


Answer-4: جس دن شک ہو کہ ۳۰ شعبان ہے یا رمضان کی پہلی تورمضان کی نیت سے روزہ نہیں رکھ سکتے قضا یا مستحب روزے کی نیت کریں۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:278 | volume:0



191

Category : چاند

Question : جس دن شک ہو کہ ۳۰ شعبان ہے یا اول رمضان کیا اس دن روزہ رکھنا واجب ہے؟


Answer-1: جس دن شک ہو کہ ۳۰ شعبان ہے یا اول رمضان تو اس دن روزہ رکھنا واجب نہیں ہے ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:295 | volume:0


Answer-2: جس دن شک ہو کہ ۳۰ شعبان ہے یا اول رمضان تو اس دن روزہ رکھنا واجب نہیں ہے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:240 | volume:0


Answer-3: جس دن شک ہو کہ ۳۰ شعبان ہے یا اول رمضان تو اس دن روزہ رکھنا واجب نہیں ہے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:271 | volume:0


Answer-4: جس دن شک ہو کہ ۳۰ شعبان ہے یا اول رمضان تو اس دن روزہ رکھنا واجب نہیں ہے ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:278 | volume:0



192

Category : روزہ

Question : اگر کوئی شخص مستحب کی نیت سے روزہ رکھے اور دن میں پتا چلے کہ رمضان ہے تو اسکی کیا ذمہ داری ہے؟


Answer-1: اگر کوئی شخص مستحب کی نیت سے روزہ رکھے اور دن میں پتا چلے کہ رمضان ہے تو ضروری ہے کہ نیت کو رمضان کے روزے میں تبدیل کرے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:295 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی شخص مستحب کی نیت سے روزہ رکھے اور دن میں پتا چلے کہ رمضان ہے تو ضروری ہے کہ نیت کو رمضان کے روزے میں تبدیل کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:240 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی شخص مستحب کی نیت سے روزہ رکھے اور دن میں پتا چلے کہ رمضان ہے تو ضروری ہے کہ نیت کو رمضان کے روزے میں تبدیل کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:271 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی شخص مستحب کی نیت سے روزہ رکھے اور دن میں پتا چلے کہ رمضان ہے تو ضروری ہے کہ نیت کو رمضان کے روزے میں تبدیل کرے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:278 | volume:0



193

Category : روزہ

Question : کیا چاند کا موٹا ہونا یا دیر سے غروب ہونا اس بات کی دلیل ہے کہ گزشتہ دن پہلی تاریخ تھی؟


Answer-1: چاند کا موٹا ہونا یا دیر سے غروب ہونا اس بات کی دلیل نہیں ہے کہ گزشتہ دن پہلی تاریخ تھی۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:320 | volume:0


Answer-2: چاند کا موٹا ہونا یا دیر سے غروب ہونا اس بات کی دلیل نہیں ہے کہ گزشتہ دن پہلی تاریخ تھی۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:263 | volume:0


Answer-3: چاند کا موٹا ہونا یا دیر سے غروب ہونا اس بات کی دلیل نہیں ہے کہ گزشتہ دن پہلی تاریخ تھی۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:297 | volume:0


Answer-4: چاند کا موٹا ہونا یا دیر سے غروب ہونا اس بات کی دلیل نہیں ہے کہ گزشتہ دن پہلی تاریخ تھی۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:302 | volume:0



194

Category : روزہ

Question : جس دن کے متعلق معلوم نہ ہو کہ تیسوں روزہ ہے یا عید کا دن اس دن روزے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: جس دن کے متعلق معلوم نہ ہو کہ تیسوں روزہ ہے یا عید کا دن اس دن روزہ رکھنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:320 | volume:0


Answer-2: جس دن کے متعلق معلوم نہ ہو کہ تیسوں روزہ ہے یا عید کا دن اس دن روزہ رکھنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:263 | volume:0


Answer-3: جس دن کے متعلق معلوم نہ ہو کہ تیسوں روزہ ہے یا عید کا دن اس دن روزہ رکھنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:298 | volume:0


Answer-4: جس دن کے متعلق معلوم نہ ہو کہ تیسوں روزہ ہے یا عید کا دن اس دن روزہ رکھنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:302 | volume:0



195

Category : روزہ

Question : رمضان کی نیت سے روزہ رکھنے کے بعد معلوم ہو کہ عید کا دن ہے تو کیا ذمہ داری ہے؟


Answer-1: رمضان کی نیت سے روزہ رکھنے کے بعد معلوم ہو کہ عید کا دن ہے تو افطار کرنا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:320 | volume:0


Answer-2: رمضان کی نیت سے روزہ رکھنے کے بعد معلوم ہو کہ عید کا دن ہے تو افطار کرنا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:263 | volume:0


Answer-3: رمضان کی نیت سے روزہ رکھنے کے بعد معلوم ہو کہ عید کا دن ہے تو افطار کرنا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:298 | volume:0


Answer-4: رمضان کی نیت سے روزہ رکھنے کے بعد معلوم ہو کہ عید کا دن ہے تو افطار کرنا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:302 | volume:0



196

Category : روزہ

Question : کیا مجتہد کے حکم سے چاند کی پہلی ثابت ہو جاتی ہے؟


Answer-1: مجتہد کے حکم سے چاند کی پہلی تاریخ ثابت نہیں ہوتی۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:320 | volume:0


Answer-2: مجتہد کے حکم سے چاند کی پہلی تاریخ ثابت ہو جاتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:263 | volume:0


Answer-3: مجتہد کے حکم سے چاند کی پہلی تاریخ ثابت نہیں ہوتی۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:297 | volume:0


Answer-4: مجتہد کے حکم سے چاند کی پہلی تاریخ ثابت نہیں ہوتی۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:302 | volume:0



197

Category : روزہ

Question : اگر کوئی شخص قضا کی نیت سے روزہ رکھے اور دن میں پتا چلے کہ رمضان ہے تو اس کا کیا فریضا ہے؟


Answer-1: اگر کوئی شخص قضا کی نیت سے روزہ رکھے اور دن میں پتا چلے کہ رمضان ہے تو ضروری ہے کہ نیت کو رمضان کے روزے میں تبدیل کرے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:295 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی شخص قضا کی نیت سے روزہ رکھے اور دن میں پتا چلے کہ رمضان ہے تو ضروری ہے کہ نیت کو رمضان کے روزے میں تبدیل کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:240 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی شخص قضا کی نیت سے روزہ رکھے اور دن میں پتا چلے کہ رمضان ہے تو ضروری ہے کہ نیت کو رمضان کے روزے میں تبدیل کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:271 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی شخص قضا کی نیت سے روزہ رکھے اور دن میں پتا چلے کہ رمضان ہے تو ضروری ہے کہ نیت کو رمضان کے روزے میں تبدیل کرے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:278 | volume:0



198

Category : روزہ

Question : اگر روزے دار بھول جائے کہ روزے سے ہے اور کچھ کھالے تو کیا اس کا روزہ باطل ہو جائے گا؟


Answer-1: اگر روزے دار بھولے سے کچھ کھالے یا پی لے تو اس کا روزہ باطل نہیں ہوگا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:297 | volume:0


Answer-2: اگر روزے دار بھولے سے کچھ کھالے یا پی لے تو اس کا روزہ باطل نہیں ہوگا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:241 | volume:0


Answer-3: اگر روزے دار بھولے سے کچھ کھالے یا پی لے تو اس کا روزہ باطل نہیں ہوگا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:272 | volume:0


Answer-4: اگر روزے دار بھولے سے کچھ کھالے یا پی لے تو اس کا روزہ باطل نہیں ہوگا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:280 | volume:0



199

Category : روزہ

Question : کیا دانتوں کے درمیان کھانے کے ذرات کا روزے کے دوران نگل جانے سے روزہ باطل ہوجاتا ہے؟


Answer-1: دانتوں کے درمیان کھانے کے جو ذرات رہ جاتے ہیں انھیں روزے کے دوران جان بوجھ کر نگلنے سے روزہ باطل ہوجاتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:297 | volume:0


Answer-2: دانتوں کے درمیان کھانے کے جو ذرات رہ جاتے ہیں انھیں روزے کے دوران جان بوجھ کر نگلنے سے روزہ باطل ہوجاتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:242 | volume:0


Answer-3: دانتوں کے درمیان کھانے کے جو ذرات رہ جاتے ہیں انھیں روزے کے دوران جان بوجھ کر نگلنے سے روزہ باطل ہوجاتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:272 | volume:0


Answer-4: دانتوں کے درمیان کھانے کے جو ذرات رہ جاتے ہیں انھیں روزے کے دوران جان بوجھ کر نگلنے سے روزہ باطل ہوجاتا ہے۔اگر یہ شخص اپنے روزے دار ہونے کی طرف متوجہ ہو۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:280 | volume:0



200

Category : روزہ

Question : کیا اللہ ،رسول اللہؐ اور اممہ طاہرینؑ سے جھوٹی بات نقل کرنے سے روزہ باطل ہوجاتا ہے؟


Answer-1: اللہ تعالیٰ، رسول اللہؐ اور اممہ طاہرینؑ سےجان بوجھ کر جھوٹی بات نقل کرنے سے احتیاط لازم کی بنا پر روزہ باطل ہوجاتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:299 | volume:0


Answer-2: اللہ تعالیٰ، رسول اللہؐ اور اممہ طاہرینؑ سےجان بوجھ کر جھوٹی بات نقل کرنے سے روزہ باطل ہوجاتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:244 | volume:0


Answer-3: اللہ تعالیٰ، رسول اللہؐ اور اممہ طاہرینؑ سےجان بوجھ کر جھوٹی بات نقل کرنے سے روزہ باطل ہوجاتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:275 | volume:0


Answer-4: اللہ تعالیٰ، رسول اللہؐ اور اممہ طاہرینؑ سے جان بوجھ کرجھوٹی بات نقل کرنے سے روزہ باطل ہوجاتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:282 | volume:0