Question Answers

Compiled by Khatim-ul-Ambia University (Hausary Madressa) Karachi


401

Category : نماز

Question : اگر کوئی رکوع بھول جائے اور سجدے میں جائے پھر یاد آئے کہ رکوع نہیں کیا تو اس کی کیا ذمہ داری ہے؟


Answer-1: اگر کوئی رکوع بھول کر سجدے میں جائے اور یاد آجائے کہ رکوع نہیں کیا تو ضروری ہے کہ سیدھا کھڑے ہونے کے بعد رکوع میں جائے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:200 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی رکوع بھول کر سجدے میں جائے اور یاد آجائے کہ رکوع نہیں کیا تو ضروری ہے کہ سیدھا کھڑے ہونے کے بعد رکوع میں جائے

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:178 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی رکوع بھول کر سجدے میں جائے اور یاد آجائے کہ رکوع نہیں کیا تو ضروری ہے کہ سیدھا کھڑے ہونے کے بعد رکوع میں جائے

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:162 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی رکوع بھول کر سجدے میں جائے اور یاد آجائے کہ رکوع نہیں کیا تو ضروری ہے کہ سیدھا کھڑے ہونے کے بعد رکوع میں جائے

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:186 | volume:0



402

Category : نماز

Question : کیا نماز میں رکوع کے بعد سیدھا کھڑا ہونا ضروری ہے؟


Answer-1: رکوع کے بعد سیدھا کھڑے ہونا واجب ہے اگر عمداً بغیر کھڑے ہوئے سجدے میں چلا جائے تو نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:200 | volume:0


Answer-2: رکوع کے بعد سیدھا کھڑے ہونا واجب ہے اگر عمداً بغیر کھڑے ہوئے سجدے میں چلا جائے تو نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:162 | volume:0


Answer-3: رکوع کے بعد سیدھا کھڑے ہونا واجب ہے اگر عمداً بغیر کھڑے ہوئے سجدے میں چلا جائے تو نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:178 | volume:0


Answer-4: رکوع کے بعد سیدھا کھڑے ہونا واجب ہے اگر عمداً بغیر کھڑے ہوئے سجدے میں چلا جائے تو نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:186 | volume:0



403

Category : نماز

Question : اگر کسی رکعت میں رکوع بھول جائے اور دوسرے سجدے میں یاد آئے تو نماز کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر کسی رکعت میں رکوع بھول جائے اور دوسرے سجدے میں یاد آئے تو احتیاط لازم کی بنا پر نماز باطل ہے ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:201 | volume:0


Answer-2: اگر کسی رکعت میں رکوع بھول جائے اور سجدے میں یاد آئےاحتیاط کی بنا پر کھڑے ہوکر رکوع کرے نماز مکمل کرے اور دودبارہ نماز پڑھے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:163 | volume:0


Answer-3: اگر کسی رکعت میں رکوع بھول جائے اور دوسرے سجدے میں یاد آئے نماز باطل ہے

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:178 | volume:0


Answer-4: اگر کسی رکعت میں رکوع بھول جائے اور دوسرے سجدے میں یاد آئے نماز باطل ہے

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:186 | volume:0



404

Category : نماز

Question : اگر کوئی شخص بھولے سے ایک رکعت میں دو سجدے اضافہ کردے تو اس کی نما ز کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر کوئی شخص بھولے سے ایک رکعت میں دو سجدے اضافہ کردے تو احتیاط لازم کی بناپر اس کی نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:201 | volume:0


Answer-2: اگرکوئی شخص بھولے سے یک رکعت میں دو سجدے اضافہ کردے تو اس کی نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:163 | volume:0


Answer-3: اگرر کوئی شخص بھولے سے یک رکعت میں دو سجدے اضافہ کردے تو اس کی نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:179 | volume:0


Answer-4: اگرر کوئی شخص بھولے سے یک رکعت میں دو سجدے اضافہ کردے تو اس کی نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:187 | volume:0



405

Category : نماز

Question : اگر کوئی شخص نماز کی ایک رکعت میں دونوں سجدے بھول جائے تو اس کی نماز کا کیا حکم ہے ؟


Answer-1: اگر کوئی شخص نماز کی ایک رکعت میں دونوں سجدے بھول جائے تو اس کی نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:201 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی شخص نماز کی ایک رکعت میں دونوں سجدے بھول جائے تو اس کی نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:163 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی شخص نماز کی ایک رکعت میں دونوں سجدے بھول جائے تو اس کی نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:179 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی شخص نماز کی ایک رکعت میں دونوں سجدے بھول جائے تو اس کی نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:187 | volume:0



406

Category : نماز

Question : سجدے میں کن اعضاء کو زمین پر رکھنا ضروری ہے ؟


Answer-1: سجدے میں دونوں ہتھیلیاں دونوں زانو اور پاؤں کے دونوں انگوٹھے اور پیشانی کو زمین پر رکھنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:201 | volume:0


Answer-2: سجدے میں دونوں ہتھیلیاں دونوں زانو اور پاؤں کے دونوں انگوٹھے اور پیشانی کو زمین پر رکھنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:163 | volume:0


Answer-3: سجدے میں دونوں ہتھیلیاں دونوں زانو اور پاؤں کے دونوں انگوٹھے اور پیشانی کو زمین پر رکھنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:179 | volume:0


Answer-4: سجدے میں دونوں ہتھیلیاں دونوں زانو اور پاؤں کے دونوں انگوٹھے اور پیشانی کو زمین پر رکھنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:187 | volume:0



407

Category : خمس

Question : جس مال سے خمس کا تعلق ہو اور سال گزر جائے اور خمس نہ دے تو کیا حکم ہے ؟


Answer-1: جو مال متعلق خمس ہو اور سال گزر جائے اور خمس نہ دے تو اس مال میں تصرف نہیں کرسکتا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:331 | volume:0


Answer-2: جو مال متعلق خمس ہو اور سال گزر جائے اور خمس نہ دے تو اس مال میں تصرف نہیں کرسکتا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:272 | volume:0


Answer-3: جو مال متعلق خمس ہو اور سال گزر جائے اور خمس نہ دے تو اس مال میں تصرف نہیں کرسکتا۔اگر خمس دینے کا ارادہ رکھتا ہو تب بھی احتیاط واجب کی بنا پر تصرف نہیں کرسکتا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:308 | volume:0


Answer-4: جو مال متعلق خمس ہو اور سال گزر جائے اور خمس نہ دے تو اس مال میں تصرف نہیں کرسکتا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:317 | volume:0



408

Category : طہارت

Question : جس شخص کے بارے میں مسلمان ہونے کا علم نہ ہو اسے مسلم خاتون سے شادی کرنےکا اختیار ہے؟


Answer-1: جس شخص کے بارے میں مسلمان ہونے کا علم نہ ہو اور مسلمانوں کی علامت بھی نہ ہو تو ایسا شخص مسلم خاتون سے شادی نہیں کرسکتا ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:24 | volume:0


Answer-2: جس شخص کے بارے میں مسلمان ہونے کا علم نہ ہو تو ایسا شخص مسلم خاتون سے شادی نہیں کرسکتا ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:17 | volume:0


Answer-3: جس شخص کے بارے میں مسلمان ہونے کا علم نہ ہو تو ایسا شخص مسلم خاتون سے شادی نہیں کرسکتا ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:20 | volume:0


Answer-4: جس شخص کے بارے میں مسلمان ہونے کا علم نہ ہو تو ایسا شخص مسلم خاتون سے شادی نہیں کرسکتا ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:22 | volume:0



409

Category : طہارت

Question : جس شخص کے بارے میں معلوم نہ ہو کہ مسلمان ہے یا نہیں تو اس کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: جس شخص کے بارے میں معلوم نہ ہو کہ مسلمان ہے یا نہیں اور اس میں اسلام لانے کی علامت بھی نہ ہو تو ایسا شخص پاک ہوگا لیکن اس پر اسلام کے دیگر احکام جاری نہیں ہوں گے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:24 | volume:0


Answer-2: جس شخص کے بارے میں معلوم نہ ہو کہ مسلمان ہے یا نہیں تو ایسا شخص پاک ہوگا لیکن اس پر اسلام کے دیگر احکام جاری نہیں ہوں گے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:17 | volume:0


Answer-3: جس شخص کے بارے میں معلوم نہ ہو کہ مسلمان ہے یا نہیں تو ایسا شخص پاک ہوگا لیکن اس پر اسلام کے دیگر احکام جاری نہیں ہوں گے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:20 | volume:0


Answer-4: جس شخص کے بارے میں معلوم نہ ہو کہ مسلمان ہے یا نہیں تو ایسا شخص پاک ہوگا لیکن اس پر اسلام کے دیگر احکام جاری نہیں ہوں گے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:22 | volume:0



410

Category : طہارت

Question : جس شخص کے بارے میں مسلمان ہونا معلوم نہ ہو اسے مسلمانوں کے قبرستان میں دفن کرنا جائز ہے؟


Answer-1: جس شخص کے بارے میں مسلمان ہونے کا علم نہ ہو اور اسلام کی کوئی علامت بھی نہ ہو تو اسے مسلمانوں کے قبرستان میں دفن نہیں کرسکتے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:24 | volume:0


Answer-2: جس شخص کے بارے میں مسلمان ہونے کا علم نہ ہو تو اسے مسلمانوں کے قبرستان میں دفن نہیں کرسکتے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:17 | volume:0


Answer-3: جس شخص کے بارے میں مسلمان ہونے کا علم نہ ہو تو اسے مسلمانوں کے قبرستان میں دفن نہیں کرسکتے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:22 | volume:0


Answer-4: جس شخص کے بارے میں مسلمان ہونے کا علم نہ ہو تو اسے مسلمانوں کے قبرستان میں دفن نہیں کرسکتے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:22 | volume:0



411

Category : خمس

Question : اگر کسی تجارت وغیرہ سے کوئی فائدہ حاصل کیا اگر کوئی دوسرا مال ہو جس کا خمس واجب نہ ہو تو سال کے اخراجات فقط فائدہ سے پورا کرسکتا ہے؟


Answer-1: کسی نےتجارت وغیرہ سے کوئی فائدہ حاصل کیا اسکے پاس کوئی دوسرا مال ہو جس کا خمس واجب نہیں تو سال کے اخراجات فقط فائدہ سے پورا کرسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:330 | volume:0


Answer-2: کسی نےتجارت وغیرہ سے کوئی فائدہ حاصل کیا اسکے پاس کوئی دوسرا مال ہو جس کا خمس واجب نہیں تو سال کے اخراجات فقط فائدہ سے پورا کرسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:271 | volume:0


Answer-3: کسی نےتجارت وغیرہ سے کوئی فائدہ حاصل کیا اسکے پاس کوئی دوسرا مال ہو جس کا خمس واجب نہیں تو سال کے اخراجات فقط فائدہ سے پورا کرسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:306 | volume:0


Answer-4: کسی نےتجارت وغیرہ سے کوئی فائدہ حاصل کیا اسکے پاس کوئی دوسرا مال ہو جس کا خمس واجب نہیں تو سال کے اخراجات فقط فائدہ سے پورا کرسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:316 | volume:0



412

Category : نماز

Question : کیا پہلے سجدے کے بعد بیٹھنا واجب ہے ؟


Answer-1: پہلے سجدے کے بعد بیٹھنا اور بدن کا ساکن ہونا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:203 | volume:0


Answer-2: پہلے سجدے کے بعد بیٹھنا اور بدن کا ساکن ہونا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:164 | volume:0


Answer-3: پہلے سجدے کے بعد بیٹھنا اور بدن کا ساکن ہونا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:180 | volume:0


Answer-4: پہلے سجدے کے بعد بیٹھنا اور بدن کا ساکن ہونا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:188 | volume:0



413

Category : نماز

Question : اگر ذکر سجدہ ختم ہونے سے پہلے سر کو سجدے سے اٹھا لے تو کیا نماز صحیح ہے؟


Answer-1: اگر ذکر سجدہ ختم ہونے سے پہلے عمداً سر کو سجدے سے اٹھا لے تو نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:202 | volume:0


Answer-2: اگر ذکر سجدہ ختم ہونے سے پہلے عمداً سر کو سجدے سے اٹھا لے تو نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:164 | volume:0


Answer-3: اگر ذکر سجدہ ختم ہونے سے پہلے عمداً سر کو سجدے سے اٹھا لے تو نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:180 | volume:0


Answer-4: اگر ذکر سجدہ ختم ہونے سے پہلے عمداً سر کو سجدے سے اٹھا لے تو نماز باطل ہے۔مگر یہ کہ جاہل قاصر ہو۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:188 | volume:0



414

Category : نماز

Question : اگر پیشانی کو سجدہ گاہ پر رکھنے سے پہلے ذکر سجدہ پڑھ لے تو سجدہ صحیح ہے؟


Answer-1: اگر پیشانی کو سجدہ گاہ پر رکھنے سے پہلے اور بدن کے ساکن ہونے سے پہلے عمداًذکر سجدہ پڑھے تو نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:202 | volume:0


Answer-2: اگر پیشانی کو سجدہ گاہ پر رکھنے سے پہلے اور بدن کے ساکن ہونے سے پہلے عمداًذکر سجدہ پڑھے تو نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:164 | volume:0


Answer-3: اگر پیشانی کو سجدہ گاہ پر رکھنے سے پہلے اور بدن کے ساکن ہونے سے پہلے عمداًذکر سجدہ پڑھے تو نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:180 | volume:0


Answer-4: اگر پیشانی کو سجدہ گاہ پر رکھنے سے پہلے اور بدن کے ساکن ہونے سے پہلے عمداًذکر سجدہ پڑھے تو نماز باطل ہے۔مگر یہ کہ جاہل قاصر ہو۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:188 | volume:0



415

Category : نماز

Question : اگر سجدے کی حالت میں اعضاء سجدے میں سے کوئی ایک زمین پر نہ ہو تو کیا سجدہ ہوجائےگا؟


Answer-1: اگر سجدے کی حالت میں پیشانی کےعلاوہ کوئی اور اعضاء سجدے سھواً زمین پر نہ رکھے تو سجدہ صحیح ہے ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:202 | volume:0


Answer-2: اگر سجدے کی حالت میں پیشانی کےعلاوہ کوئی اور اعضاء سجدے سھواً زمین پر نہ رکھے تو سجدہ صحیح ہے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:163 | volume:0


Answer-3: اگر سجدے کی حالت میں پیشانی کےعلاوہ کوئی اور اعضاء سجدے سھواً زمین پر نہ رکھے تو سجدہ صحیح ہے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:179 | volume:0


Answer-4: اگر سجدے کی حالت میں پیشانی کےعلاوہ کوئی اور اعضاء سجدے سھواً زمین پر نہ رکھے تو سجدہ صحیح ہے ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:187 | volume:0



416

Category : نماز

Question : اگر کوئی سجدے میں ذکر پڑھنا بھول جائے اور سر اٹھا لے تو کیا اس کی نماز صحیح ہے ؟


Answer-1: اگر کوئی سجدے میں ذکر پڑھنا بھول جائے اور سر اٹھا لے تو اس کی نماز صحیح ہے ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:202 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی سجدے میں ذکر پڑھنا بھول جائے اور سر اٹھا لے تو اس کی نماز صحیح ہے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:163 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی سجدے میں ذکر پڑھنا بھول جائے اور سر اٹھا لے تو اس کی نماز صحیح ہے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:179 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی سجدے میں ذکر پڑھنا بھول جائے اور سر اٹھا لے تو اس کی نماز صحیح ہے ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:187 | volume:0



417

Category : نماز

Question : اگر کوئی سجدے کی حالت میں بھولے سے پیشانی زمین پر نہ رکھے تو اس کے سجدے کا کیا حکم ہے ؟


Answer-1: اگر کوئی بھولے سےسجدے کی حالت میں پیشانی زمین پر نہ رکھے تو اس کا سجد ہ نہیں ہوا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:202 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی بھولے سےسجدے کی حالت میں پیشانی زمین پر نہ رکھے تو اس کا سجد ہ نہیں ہوا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:163 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی بھولے سےسجدے کی حالت میں پیشانی زمین پر نہ رکھے تو اس کا سجد ہ نہیں ہوا

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:179 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی بھولے سےسجدے کی حالت میں پیشانی زمین پر نہ رکھے تو اس کا سجد ہ نہیں ہوا

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:187 | volume:0



418

Category : نماز

Question : کیا سجدے میں سبحان ربی الاعلی وبحمدہ پڑھنا واجب ہے؟


Answer-1: سجدے میں سبحان ربی الاعلی وبحمدہ پڑھنا واجب نہیں ہے البتہ احتیاط واجب ہے کہ اس کی مقدار کے برابر ذکر سے کم نہ ہو۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:202 | volume:0


Answer-2: سجدے میں سبحان ربی الاعلی وبحمدہ پڑھنا واجب نہیں ہے البتہ احتیاط واجب ہے کہ اس کی مقدار کے برابر ذکر سے کم نہ ہو۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:163 | volume:0


Answer-3: سجدے میں سبحان ربی الاعلی وبحمدہ پڑھنا واجب نہیں ہے البتہ واجب ہے کہ اس کی مقدار کے برابرذکر پڑھے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:179 | volume:0


Answer-4: سجدے میں سبحان ربی الاعلی وبحمدہ پڑھنا واجب نہیں ہے البتہ واجب ہے کہ اس کی مقدار کے برابرذکر پڑھے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:187 | volume:0



419

Category : خمس

Question : اگر کسی شخص سے مال لے جس کے بارے میں شک ہو کہ اس کا خمس دیا ہے یا نہیں تو کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر کسی شخص سے مال لے جس کے بارے میں شک ہو کہ اس کا خمس دیا ہے یا نہیں تو اس میں تصرف کرسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:332 | volume:0


Answer-2: اگر کسی شخص سے مال لے جس کے بارے میں شک ہو کہ اس کا خمس دیا ہے یا نہیں تو اس میں تصرف کرسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:273 | volume:0


Answer-3: اگر کسی شخص سے مال لے جس کے بارے میں شک ہو کہ اس کا خمس دیا ہے یا نہیں تو اس میں تصرف کرسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:308 | volume:0


Answer-4: اگر کسی سے کوئی مال ملے جس کے بارے میں شک ہو کہ اسکا خمس دیا ہے یا نہیں اور دینے والا خمس کا معتقد نہ ہو تو تصرف کرسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:317 | volume:0



420

Category : خمس

Question : اگر کسی سے کوئی مال ملے جس کے بارے میں یقین ہے کہ اسکا خمس نہیں دیا ہے تو کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر ایسے شخص سے مال ملے جو خمس نہیں دیتا اور یقین ہے کہ اسکا خمس نہیں دیا اور لینے والا اثنا عشری مسلمان ہوتو وہ اس مال میں تصرف کرسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:332 | volume:0


Answer-2: اگر کسی سے مال ملے جس کے بارے میں یقین ہے کہ اسکا خمس نہیں دیا ہے تو اس میں تصرف نہیں کرسکتا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:273 | volume:0


Answer-3: اگر کسی سے مال ملے جس کے بارے میں یقین ہے کہ خمس نہیں دیا ہے تو اس میں تصرف کرسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:308 | volume:0


Answer-4: اگر ایسے شخص سے مال ملے جو خمس کا معتقد نہیں ہے اور یقین ہے کہ اس نے خمس نہیں دیا تو اس مال میں تصرف کرسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:317 | volume:0



421

Category : حج

Question : کیا مستحب طواف میں طہارت (باوضو) سے ہونا ضروری ہے؟


Answer-1: مستحب طواف میں باوضو ہونا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:217 | volume:0


Answer-2: مستحب طواف میں باوضو ہونا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج | Page:168 | volume:0


Answer-3: مستحب طواف میں باوضو ہونا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:186 | volume:0


Answer-4: مستحب طواف میں باوضو ہونا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:149 | volume:0



422

Category : حج

Question : اگر کسی خاتون کو عمرہ تمتع کے طواف کے چوتھے چکر کے بعد حیض آجائے اور بعد میں عمرہ کے اعمال کیلئے وقت نہ ہو تو اسکا کیا وظیفہ ہے؟


Answer-1: اگر کسی خاتون کو عمرہ تمتع کے طواف کے چوتھے چکر کے بعد حیض آجائے اور بعد میں عمرے کے اعمال کیلئے وقت نہ ہو تو جتنا طواف کیا ہے وہ صحیح ہے پھرسعی اور تقصیرکرے اور حج کا احرام باندھے پھر اعمال منی انجام دینے کے بعد باقی طواف کی قضا کرے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:215 | volume:0


Answer-2: اگر کسی خاتون کوعمرہ تمتع کے طواف کے چوتھے چکر کے بعد حیض آجائے اور وقوف عرفات تک وہ پاک نہ ہو تو سعی وتقصیر کرے اور حج تمتع کے لئے محرم ہوجائے اور طواف حج سے پہلے یا بعد میں عمرہ تمتع کے باقی اعمال انجام دے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج | Page:215 | volume:0


Answer-3: اگر کسی خاتون کوعمرہ تمتع کے طواف کے چوتھے چکر کے بعد حیض آجائے اور وقوف عرفات تک وہ پاک نہ ہو تو سعی وتقصیر کرے اور حج تمتع کے لئے محرم ہوجائے اور حج کے طواف سے پہلے قضا طواف کو انجام دے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:237 | volume:0


Answer-4: اگر کی خاتون کو عمرہ تمتع کے طواف کے چوتھے چکر کے بعد حیض آجائے اور بعد میں عمرہ کے اعمال کیلئے وقت نہ ہو تو احتیاط واجب کی بنا پر طواف چھوڑنے کے بعد سعی اور تقصیر کرے اور پھر حج کا احرام مافی الذمہ کی نیت سے باندے اور حج تمتع کے اعمال انجام دے اور اعمال منی کے بعد سب سے پہلے طواف عمرہ کرے اور حج کے باقی اعمال انجام دے اور اعمال کے انجام دینے کے بعد ایک عمرہ مفردہ بھی کرے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:147 | volume:0



423

Category : خمس

Question : جب چھوٹے بچے کا مال متعلق خمس ہو تو خمس کون ادا کرے گا؟


Answer-1: جب چھوٹے بچے کا مال متعلق خمس ہو تو بچے کے ولی پر خمس ادا کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:332 | volume:0


Answer-2: جب چھوٹے بچے کا مال متعلق خمس ہو تو احتیاط واجب کی بنا پر بچہ بالغ ہونے کےبعد خمس ادا کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:273 | volume:0


Answer-3: جب چھوٹے بچے کا مال متعلق خمس ہو تو بچے کے ولی پر خمس ادا کرنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:317 | volume:0


Answer-4: اگر چھوٹے بچے کو نفع وغیرہ ہو تو بچے پر بالغ ہونے کے بعد بھی خمس واجب نہیں ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:308 | volume:0



424

Category : خمس

Question : اگر چھوٹے بچے کو نفع حاصل ہو تو اسکا کیا حکم ہے ؟


Answer-1: اگر چھوٹے بچے کو کوئی منا فع حاصل ہو اگر چہ مثلاً ہدیہ وغیرہ سے اوراسے اثناء سال میں خرچ نہ کیا ہو تو وہ متعلق خمس ہو گا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:332 | volume:0


Answer-2: اگر چھوٹے بچے کا کوئی سرمایہ ہو اور اس سے نفع ہوتو احتیاط واجب کی بنا پر بالغ ہونے بعد اسکا خمس ادا کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:273 | volume:0


Answer-3: اگر چھوٹے بچے کا کوئی سرمایہ ہو اور اس سے نفع ہو تو بچے کو بالغ ہونے کے بعد خمس دینے کی ضرورت نہیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:308 | volume:0


Answer-4: اگر چھوٹے بچے کا کوئی سرمایہ ہو اوراس سے نفع حاصل ہو تو وہ متعلق خمس ہوگا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:317 | volume:0



425

Category : طہارت

Question : کیا الکحل پاک ہے؟


Answer-1: الکحل پاک ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:25 | volume:0


Answer-2: صنعتی الکحل جب تک انسان نہ جانتا ہو کہ اسے مست کنندہ بہنے والی چیز سے بنایا گیا ہوتو پاک ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:18 | volume:0


Answer-3: صنعتی الکحل اور اسکی تمام اقسام پاک ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:20 | volume:0


Answer-4: صنعتی الکحل اور اسکی تمام اقسام پاک ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:22 | volume:0



426

Category : نماز

Question : کیا سجدے کی حالت میں بدن کا ساکن ہونا ضروری ہے؟


Answer-1: سجدے میں ذکر واجب کے وقت بدن کا ساکن ہونا واجب ہے احتیاط واجب ہے کہ ذکر واجب کے علاوہ بھی بدن ساکن ہو۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:202 | volume:0


Answer-2: سجدے میں ذکر واجب کے وقت بدن کا ساکن ہونا واجب ہے اور ذکر مستحب اگر ذکر سجدے کی نیت سے پڑھے تو بھی بدن کا ساکن ہونا لازم ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:164 | volume:0


Answer-3: سجدے میں ذکر واجب کے وقت بدن کا ساکن ہونا واجب ہے اور ذکر مستحب کو اگر سجدے کے ذکر کی نیت سے پڑھیں تو احتیاط واجب ہے کہ بدن ساکن ہو۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:180 | volume:0


Answer-4: سجدے میں ذکر واجب کے وقت بدن کا ساکن ہونا واجب ہے اور ذکر مستحب کو اگر ذکر سجدے کی نیت سے پڑھیں تو احتیاط واجب ہے کہ بدن ساکن ہو۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:187 | volume:0



427

Category : خمس

Question : اگر کپڑے پر خمس واجب ہوگیا ہے توکیا خمس پیسے سے دے سکتا ہے۔؟


Answer-1: اگر کپڑے پر خمس واجب ہوگیا ہو تو جتنی اسکے خمس کی قیمت بنتی ہے خمس دیے ہوئے پیسے سے ادا کرسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:331 | volume:0


Answer-2: اگر کپڑے پر خمس واجب ہوگیا ہو تو جتنی اسکے خمس کی قیمت بنتی ہےپیسے سے ادا کرسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:272 | volume:0


Answer-3: اگر کپڑے پر خمس واجب ہوگیا ہو تو جتنی اسکے خمس کی قیمت بنتی ہےپیسے سے ادا کرسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:307 | volume:0


Answer-4: اگر کپڑے پر خمس واجب ہوگیا ہو تو جتنی اسکے خمس کی قیمت بنتی ہے رائج پیسے سے ادا کرسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:317 | volume:0



428

Category : حج

Question : کیا مستحب طواف میں بھی حائضہ، نفساء،اورمجنب کیلئے طہارت کرنا ضروری ہے؟


Answer-1: مشہور فقہاء کے نذدیک حدیث اکبر (حیض،نفاس،جنابت)کیلئے طہارت ضروری نہیں ہے۔(لیکن کیونکہ یہ خواتین مسجد الحرام میں داخل نہیں ہوسکتیں لہذا طواف بھی نہیں کرسکتیں۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:217 | volume:0


Answer-2: مستحب طواف میں حدیث اکبر و اصغر سے پاک ہونا ضروری نہیں لیکن مجنب،حائض یا نفسا پر مسجد الحرام میں داخل ہونا جائز نہیں ہے لہذا وہ طواف نہیں کرسکتے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج | Page:168 | volume:0


Answer-3: مستحب طواف میں حدیث اکبر و اصغر سے پاک ہونا ضروری نہیں لیکن مجنب،حائض یا نفسا پر مسجد الحرام میں داخل ہونا جائز نہیں ہے لہذا وہ طواف نہیں کرسکتے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:186 | volume:0


Answer-4: مستحب طواف میں طہارت ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:149 | volume:0


Answer-5: مستحب طواف میں حدیث اکبر و اصغر سے پاک ہونا ضروری نہیں لیکن مجنب،حائض یا نفسا پر مسجد الحرام میں داخل ہونا جائز نہیں ہے لہذا وہ طواف نہیں کرسکتے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی خامنہ ای | Book:مناسک حج | Page:168 | volume:0



429

Category : حج

Question : استحاضہ کثیرہ کی صورت میں طواف کیلئے عورت کا کیا وظیفہ ہے؟


Answer-1: استحاضہ کثیرہ کی صورت میں طواف اور نماز طواف کیلئے ایک غسل کافی ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:296 | volume:0


Answer-2: استحاضہ کثیرہ کی صورت میں طواف اور نماز طواف کیلئے علیحدہ علیحدہ غسل کرے مگر یہ کہ نماز کے اختتام تک خون نہ آئے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:375 | volume:0


Answer-3: استحاضہ کثیرہ کی صورت میں طواف اور نماز طواف کیلئے علیحدہ علیحدہ غسل کرے اور اگر مبطلات وضو سے کوئی سرزد ہوجائے تووضو کرنا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:376 | volume:0


Answer-4: استحاضہ کثیرہ کی صورت میں طواف اور نماز طواف کیلئے احتیاط واجب کی بنا پر ایک غسل کرے۔اگر اس خاتون نے نماز یومیہ کیلئے دیئے جانے والے انجام دیئے ہیں تو یہ حکم احتیاط واجب کی بنا پر ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:149 | volume:0



430

Category : خمس

Question : اگر سال کے آخر میں چاول وغیرہ کا خمس پیسے سے دینا چاہے تو کس قیمت کا حساب کرےگا؟


Answer-1: اگر سال کےآخر میں چاول وغیرہ کا خمس پیسے سے دینا چاہے تو اگر اسکی قیمت وقت خریدسے زیادہ ہوگئ ہو تو سال کے آخر کی قیمت کاحساب کرے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:330 | volume:0


Answer-2: اگر سال کےآخر میں چاول وغیرہ کا خمس پیسے سے دینا چاہے تو اگر اسکی قیمت وقت خریدسے زیادہ ہوگئ ہو تو سال کے آخر کی قیمت کاحساب کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:271 | volume:0


Answer-3: اگر سال کےآخر میں چاول وغیرہ کا خمس پیسے سے دینا چاہے تو اگر اسکی قیمت وقت خریدسے زیادہ ہوگئ ہو تو سال کے آخر کی قیمت کاحساب کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:306 | volume:0


Answer-4: اگر سال کےآخر میں چاول وغیرہ کا خمس پیسے سے دینا چاہے تو اگر اسکی قیمت وقت خریدسے زیادہ ہوگئ ہو تو سال کے آخر کی قیمت کاحساب کرے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:316 | volume:0



431

Category : نماز

Question : اگر غلطی سے پیشانی کو مقررہ مقدار سے اونچی یا نیچی جگہ پر رکھ دےاور ذکر سجدے سے پہلے متوجہ ہوجائےاور پیشانی کو مقررہ حد پر نہ کھینچ سکتا ہے تو اس کے سجدے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر کوئی غلطی سے پیشانی کو زانو اور پاؤں کی انگلیوں سے مقررہ مقدار سے اتنی زیادہ اونچی جگہ پر رکھ دے کہ کہا جائے کہ حالت سجدے میں ہے اور واجب ذکر سے پہلے متوجہ ہوجائے اور پیشانی کو مقررہ حد پر نہ کھینچا جاسکتا ہو توذکرواجب انجام دے نماز صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:203 | volume:0


Answer-2: اگر غلطی سے پیشانی کو زانو اور پاؤں کی انگلیوں سے مقررہ مقدار سےاتنی زیادہ اونچی جگہ پر رکھ دے کہ کہا جائے کہ حالت سجدے میں ہے اور پیشانی کومقررہ حد تک نہ کھینچا جاسکتا ہو تواحتیاط واجب ہے کہ سر کو اٹھا کرمقررہ حد پر رکھے و نمازمکمل کرے اور دوبارہ بھی پڑھے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:165 | volume:0


Answer-3: اگر غلطی سے پیشانی کو پاؤں کی انگلیوں سے مقررہ مقدار سے اتنی زیادہ اونچی جگہ پر رکھ دے کہ کہا جائے کہ حالت سجدے میں ہے اور پیشانی کومقررہ حد تک نہ کھینچا جاسکتا ہو تو احتیاط واجب کی بنا پر نماز مکمل کرے اور دوبارہ بھی پڑھے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:188 | volume:0


Answer-4: اگر غلطی سے پیشانی کو پاؤں کی انگلیوں سے مقررہ مقدار سے زیادہ اونچی جگہ پر رکھ دے لازم ہے پیشانی مقررہ حد پر رکھےاور احتیاط واجب ہے کہ نماز مکمل کرے اور دوبارہ بھی نماز پڑھے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:181 | volume:0



432

Category : نماز

Question : اگرحالت سجدہ میں غلطی سے پیشانی کو مقررہ حد سے اونچی جگہ پر رکھ دے تو اس کی کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر غلطی سے پیشانی کو زانواور پاؤں کی انگلیوں کی جگہ سے زیادہ اونچی جگہ پر رکھ دے اور نہ کہا جائے کہ حالت سجدے میں ہے تو سر کو اٹھا لے اور پیشانی کو ایسی جگہ پر رکھے جو مقررہ حد سے اونچی نہ ہو ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:203 | volume:0


Answer-2: اگر غلطی سے پیشانی کو زانواور پاؤں کی انگلیوں سے زیادہ اونچی جگہ پر رکھ دے اور نہ کہا جائے کہ حالت سجدے میں ہے تو پیشانی کومقررہ حد پر رکھنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:165 | volume:0


Answer-3: اگر غلطی سے پیشانی کو پاؤں کی انگلیوں سے زیادہ اونچی جگہ پر رکھ دے تو لازم ہے پیشانی مقررہ حد پر رکھے اور نماز مکمل کرے اور احتیاط واجب ہے کہ دوبارہ بھی نماز پڑھے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:181 | volume:0


Answer-4: اگر غلطی سے پیشانی کو پاؤں کی انگلیوں کی جگہ سے مقررہ مقدار سے زیادہ اونچی جگہ پر رکھ دے اور نہ کہا جائے کہ حالت سجدے میں ہے تو پیشانی کومقررہ حد پر رکھنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:188 | volume:0



433

Category : نماز

Question : کیا سجدے کی حالت میں پیشانی اور بقیہ اعضاء سجدہ کا ایک سطح پر ہونا ضروری ہے؟


Answer-1: ضروری ہےسجدے کی حالت میں نمازی کی پیشانی اس کے زانواور پاؤں کی انگلیوں کے سرے سے چار ملی ہوئی انگلیوں سے زیادہ اونچی یا نیچی نہ ہو۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:203 | volume:0


Answer-2: ضروری ہے سجدے کی حالت میں نمازی کی پیشانی اس کے زانو سے چار ملی ہوئی انگلیوں سے زیادہ اونچی یا نیچی نہ ہو اور احتیاط واجب ہے انگلیوں کی جگہ سے بھی اونچی یا نیچی نہ ہو۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:164 | volume:0


Answer-3: ضروری ہےسجدے کی حالت میں نمازی کی پیشانی اس کے پاؤں کی انگلیوں سے چار ملی ہوئی انگلیوں سے زیادہ اونچی یا نیچی نہ ہو ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:180 | volume:0


Answer-4: ضروری ہے سجدے کی حالت میں نمازی کی پیشانی اس کے پاؤں کی انگلیوں سے چار ملی ہوئی انگلیوں سے زیادہ اونچی یا نیچی نہ ہو اور احٹیاط واجب ہے کہ زانو سے بھی مذکورہ مقدار سے اونچی یا نیچی نہ ہو ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:188 | volume:0



434

Category : خمس

Question : خمس کے کتنے حصے کیے جاتے ہیں؟


Answer-1: خمس کے دو برابرحصے کیے جاتے ہیں ۔۱) سہمِ امام ؑ (۲) سہمِ سادات

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:339 | volume:0


Answer-2: خمس کے دو برابرحصے کیے جاتے ہیں ۔۱) سہمِ امام ؑ (۲) سہمِ سادات

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:279 | volume:0


Answer-3: خمس کے دو برابرحصے کیے جاتے ہیں ۔۱) سہمِ امام ؑ (۲) سہمِ سادات

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:315 | volume:0


Answer-4: خمس کے دو برابرحصے کیے جاتے ہیں ۔۱) سہمِ امام ؑ (۲) سہمِ سادات

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:324 | volume:0



435

Category : طہارت

Question : کیا انگور کا رس خود بخود جوش میں آجائے یا پکانے کے نتیجے میں جوش میں آجائے تو نجس ہوجائے گا؟


Answer-1: انگور کا رس چاہے خود بخود جوش میں آئے یا پکانے کی وجہ سے جوش میں آجائے نجس نہیں ہوگا لیکن اسکا پینا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:25 | volume:0


Answer-2: انگور کا رس اگر خود بخود جوش میں آجائے اسکا پینا حرام ہے لیکن نجس نہیں مگر یہ کہ مست کنندہ ہونے کا علم ہوجائے اور اگر پکانے کی وجہ سے جوش میں آجائے تو اسکا پینا حرام ہے لیکن نجس نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:18 | volume:0


Answer-3: انگور کا رس چاہے خود بخود جوش میں آئے یا پکانے کی وجہ سے جوش میں آجائے نجس نہیں ہوگا لیکن اسکا پینا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:20 | volume:0


Answer-4: اگر انگور کا رس پکانے کی وجہ سے جوش میں آئے تو پاک ہے لیکن اس کا پینا حرام ہے ہاں اگر آگ کے علاوہ کسی اور وجہ سے جو ش میں آجائے تو اس کا پینا حرام اور احتیاط کی بنا پر نجس ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:22 | volume:0



436

Category : نماز

Question : اگر غلطی سے پیشانی کو مقررہ حد سے اونچی یا نیچی جگہ پر رکھ دے اور ذکر سجدہ سے پہلے متوجہ ہوجائے تو اس کے سجدے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: غلطی سے پیشانی کو چار ملی ہوئی انگلیوں کی مقدار سے زیادہ اونچی جگہ پر رکھ دے اور کہا جائے کہ حا لت سجدے میں ہے اور واجب ذکر سے پہلے متوجہ ہوجائے تو واجب ہے پیشانی کو مقررہ جگہ پر کھینچے اور ذکر واجب انجام دے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:203 | volume:0


Answer-2: غلطی سےپیشانی کو چار ملی ہوئی انگلیوں کی مقدار سے زیادہ اونچی جگہ پر رکھ دے اور کہا جائے کہ حا لت سجدے میں ہے احتیاط واجب ہے پیشانی کو مقررہ حد پر کھینچے اور ذکر پڑھے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:165 | volume:0


Answer-3: غلطی سے پیشانی کو پاؤں کی انگلیوں سےچار ملی ہوئی انگلیوں سے زیادہ اونچی جگہ پر رکھ دےلازم ہے پیشانی مقررہ حدپر رکھے اور احتیاط واجب ہے کہ نماز مکمل کرے اور دوبارہ بھی نماز پڑھے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:181 | volume:0


Answer-4: غلطی سےپیشانی کو چار ملی ہوئی انگلیوں کی مقدار سے زیادہ اونچی جگہ پر رکھ دے اور کہا جائے کہ حا لت سجدے میں ہے واجب ہے پیشانی کو مقررہ حد پر کھینچے اور ذکر پڑھے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:188 | volume:0



437

Category : خمس

Question : غیر شیعہ اثنا عشری سید کو سہم سادات دیا جاسکتا ہے؟


Answer-1: غیر شیعہ اثنا عشری سید کو سہم سادات نہیں دیا جاسکتا ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:340 | volume:0


Answer-2: غیر شیعہ اثنا عشری سید کو سہم سادات نہیں دیا جاسکتا ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:279 | volume:0


Answer-3: غیر شیعہ اثنا عشری سید کو سہم سادات نہیں دیا جاسکتا ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:315 | volume:0


Answer-4: غیر شیعہ اثنا عشری سید کو سہم سادات نہیں دیا جاسکتا ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:325 | volume:0



438

Category : خمس

Question : جو سید خمس کو گناہ میں صرف کرتا ہو تو اسکو خمس دیا جاسکتا ہے؟


Answer-1: جو سید خمس کو گناہ میں صرف کرتا ہو تو اسکو خمس نہیں دیا جاسکتا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:340 | volume:0


Answer-2: جو سید گناہ گار ہے اور خمس دینا اس کے گناہ کرنے میں مدد دیتا ہو تو اسکو خمس نہیں دیا جاسکتا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:279 | volume:0


Answer-3: جو سید گناہ گار ہے اور خمس دینا اس کے گناہ کرنے میں مدد دیتا ہو تو اسکو خمس نہیں دیا جاسکتا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:315 | volume:0


Answer-4: جو سید گناہ گار ہے اور خمس دینا اس کے گناہ کرنے میں مدد دیتا ہو تو اسکو خمس نہیں دیا جاسکتا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:325 | volume:0



439

Category : حج

Question : اگر کوئی عورت عمرہ تمتع کے طواف کے بعد اور نماز سے پہلے حائضہ ہوجائے اور عمرہ تمتع کے وقت سے پہلے پاک ہوجائے تو اسکا کیا وظیفہ ہے؟


Answer-1: اگر کسی عورت کو عمرہ تمتع کے طواف کے بعد حیض آجائے لیکن اسکے پاس عمرہ تمتع کیلئے وقت ہو تو صبر کرے تا کہ پاک ہوجائے اور پھر نماز پڑھے اور باقی اعمال انجام دے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:414 | volume:0


Answer-2: اگر کسی عورت کو عمرہ تمتع کے طواف کے بعد حیض آجائے لیکن اسکے پاس عمرہ تمتع کیلئے وقت ہو تو صبر کرے تا کہ پاک ہوجائے اور پھر نماز پڑھے اور باقی اعمال انجام دے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:414 | volume:0


Answer-3: اگر کسی عورت کو عمرہ تمتع کے طواف کے بعد حیض آجائے لیکن اسکے پاس عمرہ تمتع کیلئے وقت ہو تو صبر کرے تا کہ پاک ہوجائے اور پھر نماز پڑھے اور باقی اعمال انجام دے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:265 | volume:0



440

Category : حج

Question : استحاضہ متوسط کی صورت میں طواف انجام دینے کی کیا شرائط ہیں؟


Answer-1: استحاضہ متوسط کی صورت میں عورت کو ایک غسل طواف اور نماز طواف کے لئے انجام دینا ہوگا اور ہر ایک کیلئے وضو کرنا پڑے گا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:218 | volume:0


Answer-2: استحاضہ متوسط کی صورت میں عورت کو ایک غسل طواف اوراحتیاط واجب کی بنا پر نماز طواف کے لئے انجام دینا ہوگا اور ہر ایک کیلئے وضو کرنا پڑے گا۔اوراگر اس نے نماز یومیہ کیلئے دے جانے والے وظائف انجام دئیے ہیں تو یہ حکم احتیاط واجب کی بنا پر ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:150 | volume:0



441

Category : حج

Question : وہ عورت جس نے حیض روکنے کیلئے دوا کھائی ہو لیکن عادت کے دنوں میں زرد رنگ کے نشان دیکھے تواسکے اعمال حج وعمرہ کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: وہ عورت جس نے حیض روکنے کیلئےدوا کھائی ہو اگر عادت کے ایام میں زرد رنگ کے نشان دیکھے تو یہ استحصاضہ کاحکم رکھتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:165 | volume:0


Answer-2: وہ عورت جس نے حیض روکنے کیلئےدوا کھائی ہو اگر عادت کے ایام میں زرد رنگ کے نشان دیکھے تو یہ استحصاضہ کاحکم رکھتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:381 | volume:0


Answer-3: وہ عورت جس نے حیض روکنے کیلئےدوا کھائی ہو اگر عادت کے ایام میں زرد رنگ کے نشان دیکھے تو یہ استحصاضہ کاحکم رکھتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:241 | volume:0



442

Category : حج

Question : وہ خاتون جسے استحاضہ قلیل ہو کیا وہ واجب طواف کر سکتی ہے؟


Answer-1: جس خاتون کو استخاضہ قلیلہ ہو احتیاط واجب کی بنا پر طواف اور نماز کیلئے علیحدہ وضو کرے اگر اس نے نماز یومیہ کیلئے دئیے جانے والے وظائف انجام دیئے ہیں تو یہ حکم احتیاط واجب کی بنا پر ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:218 | volume:0


Answer-2: جس خاتون کو استحاضہ قلیلہ ہو اسکے لئے ضروری ہے کہ طواف کیلئے وضو کرے اور احتیاط واجب کی بنا پر نماز طواف کے لئے علیحدہ وضو کرے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:149 | volume:0



443

Category : حج

Question : اگر کوئی عورت عمرہ تمتع کے طواف کے بعد اور نماز سے پہلے حیض حائضہ ہوجائے لیکن عمرہ تمتع کے وقت میں پاک نہ ہو تو اسکا کیا وظیفہ ہے؟


Answer-1: اگر کسی عورت کو عمرہ تمتع کے طواف کے بعد حیض آجائے اور اسکے پاس پاک ہونے کے بعد باقی اعمال انجام دینے کا وقت نہ ہو تو وہ عمرہ تمتع کے سعی اور تقصیر انجام دے اور حج تمتع کیلئے محرم ہوجائے اور حج کے طواف سے پہلے عمرہ تمتع کے طواف کی نماز پڑھے اور پھر باقی اعمال انجام دے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:414 | volume:0


Answer-2: اگر کسی عورت کو عمرہ تمتع کے طواف کے بعد حیض آجائے اور اسکے پاس پاک ہونے کے بعد باقی اعمال انجام دینے کاوقت نہ ہو تو وہ عمرہ تمتع کے سعی اور تقصیر انجام دے اور حج تمتع کیلئے محرم ہوجائے اور حج کے طواف کے بعد یا اس سے پہلے عمرہ تمتع کے طواف کی نماز پڑھے اور پھر باقی اعمال انجام دے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:414 | volume:0


Answer-3: اگر کسی عورت کو عمرہ تمتع کے طواف کے بعد حیض آجائے اور اسکے پاس پاک ہونے کے بعد باقی اعمال انجام دینے کا وقت نہ ہو تو وہ عمرہ تمتع کے سعی اور تقصیر انجام دے اور حج تمتع کیلئے محرم ہوجائے اور حج کے طواف کے بعد یا اس سے پہلے عمرہ تمتع کے طواف کی نماز پڑھے اور پھر باقی اعمال انجام دے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:265 | volume:0



444

Category : نماز

Question : غلطی سے پیشانی کو مقررہ مقدار سے اونچی یا نیچی جگہ پر رکھ دے اور واجب ذکر کرے بعد متوجہ ہو تو اس سجدے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: غلطی سے پیشانی کو زانو اور پاؤں کی انگلیوں سے مقررہ مقدار سے زیادہ اتنی اونچی جگہ پر رکھ دے اور کہا جائے کہ حالت سجدے میں ہے اور واجب ذکر کے بعد متوجہ ہو تو نماز صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:203 | volume:0


Answer-2: غلطی سے پیشانی کو پاؤں کی انگلیوں اورزانو سے مقررہ مقدار سے زیادہ اتنی اونچی جگہ پر رکھ دے کہ کہا جائے کہ حالت سجدے میں ہے احتیاط واجب ہےپیشانی کو مقررہ حد پر کھینچے اور ذکرپڑھے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:165 | volume:0


Answer-3: اگر غلطی سے پیشانی کو پاؤں کی انگلیوں سے مقررہ حد سے زیادہ اونچی جگہ پر رکھ دے لازم ہے پیشانی مقررہ حد پر رکھے اور احتیاط واجب ہے کہ نماز مکمل کرے اور دوبارہ بھی نماز پڑھے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:181 | volume:0


Answer-4: غلطی سے پیشانی کو پاؤں کی انگلیوں سے مقررہ مقدار سے زیادہ اتنی اونچی جگہ پر رکھ دے کہ کہا جائے کہ حالت سجدے میں ہے واجب ہےپیشانی کو مقررہ حد پر کھینچے اور ذکرپڑھے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:188 | volume:0



445

Category : خمس

Question : جس چیز کا خمس نہ دیا ہو اگر وہ کسی کو بخش دیں تو کیا حکم ہوگا؟


Answer-1: جس چیز کا خمس نہ دیا ہو اگر وہ کسی شیعہ اثنا عشری کو بخش دیں تو اسکا خمس بخشنے والے کے زمہ ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:327 | volume:0


Answer-2: جس چیز کا خمس نہ دیا گیا ہو اگر وہ کسی کو بخش دیں تو اس مال کا 1/5 حصے کا وہ مالک نہیں ہوگا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:269 | volume:0


Answer-3: جس چیز کا خمس نہ دیا گیا ہو اگر وہ کسی کو بخش دیں تو اسکا خمس بخشنے والے کے ذمہ ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:304 | volume:0


Answer-4: جس چیز کا خمس نہ دیا ہو اگر وہ کسی کو بخش دیں تو اس مال کا 1/5 حصہ اس شخص کو منتقل نہیں ہوگا

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:313 | volume:0



446

Category : خمس

Question : جو سید نماز نہیں پڑھتا اسکو خمس دیا جاسکتا ہے؟


Answer-1: احتیاط واجب کی بنا پر جو سید نما زنہیں پڑھتا اسکو خمس نہ دیں۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:340 | volume:0


Answer-2: احتیاط کی بنا پر جو سید نما زنہیں پڑھتا اسکو خمس نہ دیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:315 | volume:0



447

Category : خمس

Question : اگر کوئی شخص کہے کہ میں سید ہوں تو اسکو خمس دیا جاسکتا ہے؟


Answer-1: کسی شخص کے فقط یہ کہنے سےکہ میں سید ہوں اس شخص کو خمس نہیں دیا جا سکتا ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:340 | volume:0


Answer-2: کسی شخص کے فقط یہ کہنے سےکہ میں سید ہوں اس شخص کو خمس نہیں دیا جا سکتا ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:279 | volume:0


Answer-3: کسی شخص کے فقط یہ کہنے سےکہ میں سید ہوں اس شخص کو خمس نہیں دیا جا سکتا ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:315 | volume:0


Answer-4: کسی شخص کے فقط یہ کہنے سےکہ میں سید ہوں اس شخص کو خمس نہیں دیا جا سکتا ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:325 | volume:0



448

Category : خمس

Question : اگر کوئی کہے کہ میں سید ہوں تو کس صورت میں اس کو خمس دے سکتے ہیں؟


Answer-1: اگر کوئی کہے کہ میں سید ہوں تو اگر دو عادل فرد اسکی تصدیق کردیں یا سید ہونے کا یقین یا اطمینان ہوجائے تو اسکو خمس دیا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:340 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی کہے کہ میں سید ہوں تو اگر دو عادل فرد اسکی تصدیق کردیں یا لوگوں میں معروف ہوکہ انسان کواسکے سید ہونےکا اطمینان ہوجائے تو اسکو خمس دیا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:279 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی کہے کہ میں سید ہوں تو اگر دو عادل فرد اسکی تصدیق کردیں یا لوگوں میں معروف ہو کہ انسان کو اسکے سید ہونے کا یقین یا اطمینان ہوجائےتو اسکو خمس دیا جاسکتا ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:315 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی کہے کہ میں سید ہوں تو اگر دو عادل فرد اسکی تصدیق کردیں یا لوگوں میں معروف ہو کہ انسان کو اسکے سید ہونے کا یقین یا اطمینان ہوجائےتو اسکو خمس دیا جاسکتا بلکہ ایک قابل بھروسہ شخص کی گواہی سے بھی سیادات ثابت ہوجائےگی اگر اسکے خلاف گمان نہ ہو۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:325 | volume:0



449

Category : خمس

Question : اگر کوئی اپنے شہر میں سید مشہور ہو تو کیا اسکو خمس دے سکتے ہیں؟


Answer-1: جو اپنے شہر میں سید مشہور ہو تو اگر انسان کو اسکے خلاف کا یقین یا اطمینان نہ ہو تو اسکو خمس دیا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:340 | volume:0


Answer-2: جو اپنے شہر میں سید مشہور ہو تو اگر چہ اسکے سید ہونے کا یقین نہ بھی ہو تو اسکو خمس دیا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:280 | volume:0


Answer-3: جو اپنے شہر میں سید مشہور ہو تو اگر چہ اسکے سید ہونے کا یقین یا اطمینان نہ بھی ہو تو اسکو خمس دیا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:316 | volume:0


Answer-4: جو اپنے شہر میں سید مشہور ہو تو اگر اسکے خلاف کا ظن نہ ہو تو اسکو خمس دیا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:325 | volume:0



450

Category : خمس

Question : اگر کسی کی بیوی سیدانی تو کیا وہ اپنا خمس بیوی کو دے سکتا ہے تا کہ بیوی اپنے واجبی نان نفقہ میں صرف کرے؟


Answer-1: جس کی بیوی سیدانی ہو تو احتیاط واجب کی بنا پر اپنا خمس بیوی کو نہیں دے سکتا کہ وہ اپنے واجبی نان و نفقہ میں صرف کرے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:340 | volume:0


Answer-2: جسکی بیوی سیدانی ہو تو وہ احتیاط واجب کی بنا پر اپنا خمس بیوی کو نہیں دے سکتا کہ وہ اپنے نان و نفقہ میں صرف کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:280 | volume:0


Answer-3: جس کی بیوی سیدانی ہو تو احتیاط واجب کی بنا پر اپنا خمس بیوی کو نہیں دے سکتا کہ وہ اپنے واجبی نان و نفقہ میں صرف کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:316 | volume:0


Answer-4: جسکی بیوی سیدانی ہو تو وہ اپنا خمس بیوی کو نہیں دے سکتا کہ وہ اپنے واجبی نان ونفقہ میں صرف کرے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:325 | volume:0



451

Category : عمرہ

Question : سعی کسے کہتے ہیں؟


Answer-1: صفا ومروہ کے سات چکر جنکی ابتدا صفا سے اور انتہا ء مروہ پر ہوتی سعی کہلاتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:251 | volume:0


Answer-2: صفا ومروہ کے سات چکر جنکی ابتدا صفا سے اور انتہا ء مروہ پر ہوتی سعی کہلاتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:246 | volume:0


Answer-3: صفا ومروہ کے سات چکر جنکی ابتدا صفا سے اور انتہا ء مروہ پر ہوتی سعی کہلاتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:272 | volume:0


Answer-4: صفا ومروہ کے سات چکر جنکی ابتدا صفا سے اور انتہا ء مروہ پر ہوتی سعی کہلاتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:173 | volume:0



452

Category : عمرہ

Question : کیا سعی کے دوران باوضو ہونا ضروری ہے؟


Answer-1: سعی کے دوران باوضو ہونا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:250 | volume:0


Answer-2: سعی کے دوران باوضو ہونا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:247 | volume:0


Answer-3: سعی کے دوران باوضو ہونا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:272 | volume:0


Answer-4: سعی کے دوران باوضو ہونا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:172 | volume:0



453

Category : عمرہ

Question : اگر سعی کے دوران نجاست لگ جائے تو اسکا پاک کرنا ضروری ہے؟


Answer-1: سعی کے دوران اگر نجاست لگ جائے تو پاک کرنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:250 | volume:0


Answer-2: سعی کے دوران اگر نجاست لگ جائے تو پاک کرنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:247 | volume:0


Answer-3: سعی کے دوران اگر نجاست لگ جائے تو پاک کرنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:272 | volume:0


Answer-4: سعی کے دوران اگر نجاست لگ جائے تو پاک کرنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:172 | volume:0



454

Category : عمرہ

Question : اگر کوئی شخص طواف یا نماز طواف سے پہلے سعی کرلے تو اسکا کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر کوئی شخص طواف یا نماز طواف سے پہلے سعی کرلے تو انھیں کرنے کے بعد دوبارہ سعی کرے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:251 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی شخص طواف یا نماز طواف سے پہلے سعی کرلے تو انھیں کرنے کے بعد دوبارہ سعی کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:247 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی شخص طواف یا نماز طواف سے پہلے سعی کرلے تو انھیں کرنے کے بعد دوبارہ سعی کرے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:272 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی شخص طواف یا نماز طواف سے پہلے سعی کرلے تو انھیں کرنے کے بعد دوبارہ سعی کرے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:172 | volume:0



455

Category : عمرہ

Question : کیا سعی کرتے وقت پہ شخص کرنا کہ عمرہ کیلئے ہے یا حج کیلئے ضرروی ہے؟


Answer-1: سعی کرتے وقت ضروری ہے کہ یہ معین کیا جائے کہ یہ سعی عمرہ کیلئے ہے یا حج کیلئےہے

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:251 | volume:0


Answer-2: سعی کرتے وقت ضروری ہے کہ یہ معین کیا جائے کہ یہ سعی عمرہ کیلئے ہے یا حج کیلئےہے

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:172 | volume:0



456

Category : عمرہ

Question : کیا پیدل سعی کرنا ضروری ہے؟


Answer-1: پیدل سعی کرنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:252 | volume:0


Answer-2: پیدل سعی کرنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:247 | volume:0


Answer-3: پیدل سعی کرنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:272 | volume:0


Answer-4: پیدل سعی کرنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:174 | volume:0



457

Category : عمرہ

Question : کیا سعی کرنے کے در میان صفا یا مروہ پر بیٹھ کر آرام کیا جاسکتا ہے؟


Answer-1: سعی کرنے کے در میان صفا یا مروہ پر بیٹھ کر آرام کیا جاسکتا ہے ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:253 | volume:0


Answer-2: سعی کرنے کے در میان صفا یا مروہ پر بیٹھ کر آرام کیا جاسکتا ہے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:248 | volume:0


Answer-3: سعی کرنے کے در میان صفا یا مروہ پر بیٹھ کر آرام کیا جاسکتا ہے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:273 | volume:0


Answer-4: سعی کرنے کے در میان صفا یا مروہ پر بیٹھ کر آرام کیا جاسکتا ہے ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:175 | volume:0



458

Category : عمرہ

Question : کیا سعی کرتے وقت درمیان میں تھکاوٹ کی وجہ سے آرام کیا جاسکتا ہے۔؟


Answer-1: سعی کرتے وقت درمیان میں تھکاوٹ کی وجہ سے آرام کیا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:253 | volume:0


Answer-2: سعی کرتے وقت درمیان میں تھکاوٹ کی وجہ سے آرام کیا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:248 | volume:0


Answer-3: سعی کرتے وقت درمیان میں تھکاوٹ کی وجہ سے آرام کیا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:273 | volume:0


Answer-4: سعی کرتے وقت درمیان میں تھکاوٹ کی وجہ سے آرام کیا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:175 | volume:0



459

Category : عمرہ

Question : اگر کسی شخص کی پشت مروہ کی طرف ہو اور وہ مروہ کی طرف حرکت کررہا ہو تو اسکا کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر کسی شخص کی پشت مروہ کی طرف ہو اور وہ مروہ کی طرف حرکت کررہا ہو تو اسکی یہ سعی کفایت نہیں کرے گی۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:253 | volume:0


Answer-2: اگر کسی شخص کی پشت مروہ کی طرف ہو اور وہ مروہ کی طرف حرکت کررہا ہو تو اسکی یہ سعی کفایت نہیں کرے گی۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:247 | volume:0


Answer-3: اگر کسی شخص کی پشت مروہ کی طرف ہو اور وہ مروہ کی طرف حرکت کررہا ہو تو اسکی یہ سعی کفایت نہیں کرے گی۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:272 | volume:0


Answer-4: اگر کسی شخص کی پشت مروہ کی طرف ہو اور وہ مروہ کی طرف حرکت کررہا ہو تو اسکی یہ سعی کفایت نہیں کرے گی۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:174 | volume:0



460

Category : عمرہ

Question : اگر کوئی شخص صفا یا مروہ کی طرف حرکت کرتے وقت دائیں، بائیں یاپیچھے کی طرف دیکھے تو اسکا کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر کوئی شخص صفا یا مروہ کی طرف حرکت کرتے وقت دائیں ، بائیں یاپیچھے کی طرف دیکھے تو اسکی سعی صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:253 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی شخص صفا یا مروہ کی طرف حرکت کرتے وقت دائیں ، بائیں یاپیچھے کی طرف دیکھے تو اسکی سعی صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:247 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی شخص صفا یا مروہ کی طرف حرکت کرتے وقت دائیں، بائیں یاپیچھے کی طرف دیکھے تو اسکی سعی صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:273 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی شخص صفا یا مروہ کی طرف حرکت کرتے وقت دائیں، بائیں یاپیچھے کی طرف دیکھے تو اسکی سعی صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:174 | volume:0



461

Category : عمرہ

Question : کیا واجب نماز کی فضلیت کے وقت کو درک کرنے کیلئے سعی کے درمیان میں چھوڑا جاسکتا ہے؟


Answer-1: واجب نماز کی فضلیت کے وقت کو درک کرنے کیلئے سعی کو درمیان میں چھوڑسکتے ہیں اور بعد میں وہیں سے دوبارہ شروع کی جاسکتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:253 | volume:0


Answer-2: نماز کا وقت داخل ہونے کے بعد سعی کو چھوڑ کر نما زپڑھنا مستحب ہے اور بعد مین باقی سعی کو انجام دے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:173 | volume:0



462

Category : طہارت

Question : آب جو جسے طبیب کے دستور کے مطابق لیا جاتا ہے نجس ہے؟


Answer-1: آب جو (ماءالشعیر ) جسے طبیب کے دستو ر کے مطابق جو سے لیا جاتا ہے وہ نجس نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:منھاج الصالحین | Page:130 | volume:1


Answer-2: آب جو (ماءالشعیر ) جسے طبیب کے دستو ر کے مطابق جو سے لیا جاتا ہے وہ نجس نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:18 | volume:0


Answer-3: آب جو (ماءالشعیر ) جسے طبیب کے دستو ر کے مطابق جو سے لیا جاتا ہے وہ نجس نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:21 | volume:0


Answer-4: آب جو (ماءالشعیر ) جسے طبیب کے دستو ر کے مطابق جو سے لیا جاتا ہے وہ نجس نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:23 | volume:0



463

Category : طہارت

Question : کیا کھجور،کشمش اگر جوش میں آجائیں تو پاک ہیں اور ان کا کھانا حلال ہے؟


Answer-1: کھجور ،کشمش اگر جوش میں آجائیں تو پاک ہیں اور ان کا کھانا بھی حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:25 | volume:0


Answer-2: کھجور ،کشمش اگر جوش میں آجائیں تو پاک ہیں اور ان کا کھانا بھی حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:18 | volume:0


Answer-3: کھجور ،کشمش اگر جوش میں آجائیں تو پاک ہیں اور ان کا کھانا بھی حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:20 | volume:0


Answer-4: کھجور ،کشمش اگر جوش میں آجائیں تو پاک ہیں اور ان کا کھانا بھی حلال ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:23 | volume:0



464

Category : خمس

Question : جو سید آشکارانہ گناہ کرتا ہے اسکو خمس دیا جاسکتا ہے؟


Answer-1: احتیاط واجب کی بنا پر جو سید آشکارانہ گناہ کرتا ہے اسکو خمس نہیں دیا جاسکتا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:340 | volume:0


Answer-2: احتیاط واجب کی بنا پر جو سید آشکارانہ گناہ کرتا ہے اسکو خمس نہیں دیا جاسکتا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:279 | volume:0


Answer-3: احتیاط واجب کی بنا پر جو سید آشکارانہ گناہ کرتا ہے اسکو خمس نہیں دیا جاسکتا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:325 | volume:0


Answer-4: احتیاط واجب ہے کہ جو سید آشکارانہ گناہ کرتا ہے اسکو خمس نہیں دیا جاسکتا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:315 | volume:0



465

Category : خمس

Question : آیا اجرت پر نماز یا روزہ رکھ کر یا قرآن پڑھ کر جو پیسے آتے ہیں اسپر خمس ہے؟


Answer-1: جی ہاں اجرت پر نماز یا روزہ رکھ کر یا قرآن پڑھ کر جو کمائی ہو اسپر بھی خمس واجب ہے شرائط کےساتھ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:325 | volume:0


Answer-2: جی ہاں اجرت پر نماز یا روزہ رکھ کر یا قرآن پڑھ کر جو کمائی ہو اسپر بھی خمس واجب ہے شرائط کےساتھ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:267 | volume:0


Answer-3: جی ہاں اجرت پر نماز یا روزہ رکھ کر یا قرآن پڑھ کر جو کمائی ہو اسپر بھی خمس واجب ہے شرائط کےساتھ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:302 | volume:0


Answer-4: جی ہاں اجرت پر نماز یا روزہ رکھ کر یا قرآن پڑھ کر جو کمائی ہو اسپر بھی خمس واجب ہے شرائط کےساتھ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:311 | volume:0



466

Category : طہارت

Question : کیا حرام سے جنب ہونے والے شخص کا پسینہ نجس ہے؟


Answer-1: حرام سے جنب ہونےوالے شخص کا پسینہ پاک ہے اور اسمیں نمازبھی پڑھ سکتے ہیں

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:25 | volume:0


Answer-2: حرام سے جنب ہونے والے شخص کا پسینہ پاک ہے اور احتیاط واجب کی بنا پر اس پسینے کے ساتھ نماز نہ پڑھے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:23 | volume:0


Answer-3: حرام سے ہونے والے شخص کا پسینہ پاک ہے لیکن احتیاط واجب کی بنا پر ایسے پسینے کے ساتھ آلودہ بدن میں نماز نہ پڑھے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:18 | volume:0


Answer-4: حرام جنب ہونے والے شخص کا پسینہ نجس نہیں ہے لیکن احتیاط مستحب کی بنا پر ایسے پسینے کے ساتھ نمازنہ پڑھے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:21 | volume:0



467

Category : نماز

Question : کیا نما زمیں سجدہ گاہ پاک ہونا ضروری ہے؟


Answer-1: سجدہ گاہ کے جس حصے پرسجدہ کیا جائے اس کا پاک ہونا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:204 | volume:0


Answer-2: سجدہ گاہ کے جس حصے پرسجدہ کیا جائے اس کا پاک ہونا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:166 | volume:0


Answer-3: سجدہ گاہ کے جس حصے پرسجدہ کیا جائے اس کا پاک ہونا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:182 | volume:0


Answer-4: سجدہ گاہ کے جس حصے پرسجدہ کیا جائے اس کا پاک ہونا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:189 | volume:0



468

Category : نماز

Question : اگر سجدہ گاہ دوسری جانب سے نجس ہو تو کیا اس سجدہ گاہ پرسجدہ صحیح ہے؟


Answer-1: اگر سجدہ گاہ دوسری جانب سے نجس ہے اور جس طرف سے سجدہ کیا جائے پاک ہوتو سجدہ صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:204 | volume:0


Answer-2: اگر سجدہ گاہ دوسری جانب سے نجس ہے اور جس طرف سے سجدہ کیا جائے پاک ہوتو سجدہ صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:166 | volume:0


Answer-3: اگر سجدہ گاہ دوسری جانب سے نجس ہے اور جس طرف سے سجدہ کیا جائے پاک ہوتو سجدہ صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:182 | volume:0


Answer-4: اگر سجدہ گاہ دوسری جانب سے نجس ہے اور جس طرف سے سجدہ کیا جائے پاک ہوتو سجدہ صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:189 | volume:0



469

Category : نماز

Question : اگر کسی کے پاؤں کا انگوٹھا کٹا ہوا ہے تو کیا پھر بھی سجدے میں اسے زمین پر لگانا واجب ہے؟


Answer-1: اگر کسی کے پاؤں کا انگوٹھا کٹا ہو ا ہے تو جتنا باقی ہو اسے زمین پر لگانا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:204 | volume:0


Answer-2: اگر کسی کے پاؤں کا انگوٹھا کٹا ہو ا ہے تو جتنا باقی ہو اسے زمین پر لگانا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:165 | volume:0


Answer-3: اگر کسی کے پاؤں کا انگوٹھا کٹا ہو ا ہے تو جتنا باقی ہو اسے زمین پر لگانا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:181 | volume:0


Answer-4: اگر کسی کے پاؤں کا انگوٹھا کٹا ہو ا ہے تو جتنا باقی ہو اسے زمین پر لگانا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:189 | volume:0



470

Category : نماز

Question : اگر کسی کے پاؤں کے انگوٹھے کے ناخن بڑے ہوں اور سجدے کی حالت میں انگوٹھے کے بجائے ناخن زمین پر لگیں تو کافی ہے؟


Answer-1: اگر کسی کے پاؤں کے انگوٹھے کے ناخن بڑےہیں اور سجدے کی حالت میں صرف ناخن زمین پر لگ رہے ہیں تو اس کی نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:204 | volume:0


Answer-2: اگر کسی کے پاؤں کے انگوٹھے کے ناخن بڑےہیں اور سجدے کی حالت میں صرف ناخن زمین پر لگ رہے ہیں تو اس کی نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:165 | volume:0


Answer-3: اگر کسی کے پاؤں کے انگوٹھے کے ناخن بڑےہیں اور سجدے کی حالت میں صرف ناخن زمین پر لگ رہے ہیں تو اس کی نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:181 | volume:0


Answer-4: اگر کسی کے پاؤں کے انگوٹھے کے ناخن بڑےہیں اور سجدے کی حالت میں صرف ناخن زمین پر لگ رہے ہیں تو اس کی نماز باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:189 | volume:0



471

Category : نماز

Question : اگر سجدے میں کسی وجہ سے ہتھیلی کو زمیں پر نہ رکھ سکے تو کیا سجدہ ہوجائے گا؟


Answer-1: سجدے کی حالت میں دونوں ہتھیلی زمین پر رکھنا واجب ہے اگر ممکن نہ ہو تو ہاتھ کی پشت رکھے تو بھی صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:204 | volume:0


Answer-2: سجدے کی حالت میں دونوں ہتھیلی زمین پر رکھنا واجب ہے اگر ممکن نہ ہو تو ہاتھ کی پشت رکھے تو بھی صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:165 | volume:0


Answer-3: سجدے کی حالت میں دونوں ہتھیلی زمین پر رکھنا واجب ہے اگر ممکن نہ ہو تو ہاتھ کی پشت رکھے تو بھی صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:181 | volume:0


Answer-4: سجدے کی حالت میں دونوں ہتھیلی زمین پر رکھنا واجب ہے مجبوری کی حالت میں ہاتھ پشت کو زمین پر رکھنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:189 | volume:0



472

Category : نماز

Question : اگر سجدے گاہ پر میل جمع ہوجائےتو کیا اس پر سجدہ کیا جاسکتا ہے؟


Answer-1: اگر سجدہ گاہ پر اتنا میل جمع ہوجائے کہ پیشانی سجدہ گاہ پر نہ پہنچ سکے تو سجدہ باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:203 | volume:0


Answer-2: اگر سجدہ گاہ پر اتنا میل جمع ہوجائے کہ پیشانی سجدہ گاہ پر نہ پہنچ سکے تو سجدہ باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:165 | volume:0


Answer-3: اگر سجدہ گاہ پر اتنا میل جمع ہوجائے کہ پیشانی سجدہ گاہ پر نہ پہنچ سکے تو سجدہ باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:181 | volume:0


Answer-4: اگر سجدہ گاہ پر اتنا میل جمع ہوجائے کہ پیشانی سجدہ گاہ پر نہ پہنچ سکے تو سجدہ باطل ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:189 | volume:0



473

Category : حج

Question : عمرہ تمتع کی تقصیر کے بعد کونسا کام حلال نہیں ہوتا؟


Answer-1: عمرہ تمتع کی تقصیر کے بعد گنجا ہونے کے علاوہ سب کام حلال ہوجاتے ہیں

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:265 | volume:0


Answer-2: عمرہ تمتع کی تقصیر کے بعد گنجا ہونے کے علاوہ سب کام حلال ہوجاتے ہیں

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:292 | volume:0


Answer-3: عمرہ تمتع کی تقصیر کے بعد گنجا ہونے کے علاوہ سب کام حلال ہوجاتے ہیں

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:182 | volume:0



474

Category : حج

Question : اگر کوئی شخص تقصیر کرنا بھول جائے اور حج کا احرام باندھ لے تو اسکے عمرےکا کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر کوئی شخص تقصیر کرنا بھول جائے اور حج کااحرام باندھ لے تو اسکا عمرہ صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:261 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی شخص تقصیر کرنا بھول جائے اور حج کااحرام باندھ لے تو اسکا عمرہ صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:264 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی شخص تقصیر کرنا بھول جائے اور حج کااحرام باندھ لے تو اسکا عمرہ صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:291 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی شخص تقصیر کرنا بھول جائے اور حج کااحرام باندھ لے تو اسکا عمرہ صحیح ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:182 | volume:0



475

Category : عمرہ

Question : کیا سعی کے فوراً بعد تقصیر کر نا ضروری ہے؟


Answer-1: سعی کے فوراً بعد تقصیر کرنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:182 | volume:0


Answer-2: سعی کے فوراً بعد تقصیر کرنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:261 | volume:0


Answer-3: سعی کے بعد تقصیر کرناواجب ہے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:264 | volume:0


Answer-4: سعی کے بعد تقصیر کر نا واجب ہے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:291 | volume:0



476

Category : عمرہ

Question : عمرہ تمتع کے احرام سے باہر نکلنے کیلئے کس کام کا کر نا ضروری ہے ؟


Answer-1: عمرہ تمتع کے احرام سے باہر نکلنے کیلئے تقصیر کر نا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:260 | volume:0


Answer-2: عمرہ تمتع کے احرام سے باہر نکلنے کیلئے تقصیر کر نا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:0 | volume:0


Answer-3: عمرہ تمتع کے احرام سے باہر نکلنے کیلئے تقصیر کر نا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:265 | volume:0


Answer-4: عمرہ تمتع کے احرام سے باہر نکلنے کیلئے تقصیر کر نا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:292 | volume:0



477

Category : عمرہ

Question : کیا عمرہ تمتع کے احرام سے باہر نکلنے کیلئے گنجا ہو سکتے ہیں؟


Answer-1: عمرہ تمتع کے احرام سے باہر نکلنے کیلئے گنجا ہونا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:260 | volume:0


Answer-2: عمرہ تمتع کے احرام سے باہر نکلنے کیلئے گنجا ہونا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:181 | volume:0


Answer-3: عمرہ تمتع کے احرام سے باہر نکلنے کیلئے گنجا ہونا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:265 | volume:0


Answer-4: عمرہ تمتع کے احرام سے باہر نکلنے کیلئے گنجا ہونا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:294 | volume:0



478

Category : عمرہ

Question : تقصیر سے کیا مراد ہے؟


Answer-1: تقصیر یعنی سر ،داڑھی مونچھوں سے کچھ بالوں کا کانٹنا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:260 | volume:0


Answer-2: تقصیر یعنی سر ،داڑھی مونچھوں یا بھنوں سے کچھ بالوں کا کانٹنا یا ہاتھ یا پیر سے کچھ ناخن کا کانٹنا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:181 | volume:0


Answer-3: تقصیر یعنی سر ،داڑھی مونچھوں یا بھنوں سے کچھ بالوں کا کانٹنا یا ہاتھ یا پیر سے کچھ ناخن کا کانٹنا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:264 | volume:0


Answer-4: تقصیر یعنی سر ،داڑھی مونچھوں یا بھنوں سے کچھ بالوں کا کانٹنا یا ہاتھ یا پیر سے کچھ ناخن کا کانٹنا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:291 | volume:0



479

Category : عمرہ

Question : کیا تقصیر کرتے وقت نیت کرنا ضروری ہے؟


Answer-1: تقصیر کرتے وقت قصد قربت اور اخلاص کا ہونا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:260 | volume:0


Answer-2: تقصیر کرتے وقت قصد نیت(یعنی قربتاً الی اللہ)کا ہونا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:181 | volume:0


Answer-3: تقصیر کرتے وقت قصد نیت(یعنی قربتاً الی اللہ)کا ہونا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:264 | volume:0


Answer-4: تقصیر کرتے وقت قصد نیت(یعنی قربتاً الی اللہ)کا ہونا ضروری ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:291 | volume:0



480

Category : عمرہ

Question : کیا عمرہ تمتع میں تقصیر کے بعد طواف نساء کرنا واجب ہے؟


Answer-1: عمرہ تمتع میں طواف نساء کرنا واجب نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:262 | volume:0


Answer-2: عمرہ تمتع میں طواف نساء کرنا واجب نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:183 | volume:0


Answer-3: عمرہ تمتع میں طواف نساء کرنا واجب نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:265 | volume:0


Answer-4: عمرہ تمتع میں طواف نساء کرنا واجب نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:292 | volume:0



481

Category : عمرہ

Question : کیا سعی مکمل ہونے سے پہلے تقصیر کی جاسکتی ہے؟


Answer-1: تقصیر کو سعی سے پہلے کرنا جائز نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:261 | volume:0


Answer-2: تقصیر کو سعی سے پہلے نہیں کیا جاسکتا بلکہ حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:182 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی مسئلہ نہ جاننے کی وجہ سے یا بھولے سے کرلے تو کوئی حرج نہیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:267 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی مسئلہ نہ جاننے کی وجہ سے یا بھولے سے کرلے تو کوئی حرج نہیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:294 | volume:0



482

Category : عمرہ

Question : کیا سعی کے بعد مروہ کے مقام پر تقصیر کرنا ضروری ہے؟


Answer-1: تقصیر کیلیے کوئی خاص جگہ معین نہیں ہے لہذا کسی بھی مقام پر حج سے پہلےکی جاسکتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:261 | volume:0


Answer-2: تقصیر کیلیے کوئی خاص جگہ معین نہیں ہے لہذا کسی بھی مقام پر حج سے پہلےکی جاسکتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:182 | volume:0


Answer-3: سعی کے بعدکسی بھی مقام پر تقصیر کی جاسکتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:267 | volume:0


Answer-4: سعی کے بعدکسی بھی مقام پر تقصیر کی جاسکتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:294 | volume:0



483

Category : عمرہ

Question : اگر کوئی شخص جان بوجھ کر تقصیر نہ کرے اور حج کا احرام باندھ لے اسکے عمرے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر کوئی شخص جان بوجھ کر تقصیر نہ کرے اور حج کا احرام باندھ لے تو اسکا عمرباطل ہوجائے گا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:261 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی شخص جان بوجھ کر تقصیر نہ کرے اور حج کا احرام باندھ لے تو اسکا عمرہ باطل ہوجائے گا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:182 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی شخص جان بوجھ کرحج کا احرام باندھنے تک تقصیر نہ کرے تو اسکا عمرہ باطل ہوجائے گا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:291 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی شخص جان بوجھ کرحج کا احرام باندھنے تک تقصیر نہ کرے تو اسکا عمرہ باطل ہوجائے گا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:265 | volume:0



484

Category : عمرہ

Question : اگر کوئی شخص جان بوجھ کر عمرہ تمتع کے بعد مکہ میں اپنا سر منڈ والے تو اسکا کیا حکم ہے؟


Answer-1: اگر کوئی شخص جان بوجھ کر عمرہ تمتع کے بعد اپنا سر منڈ والے تو احتیاط واجب کی بناہ پر اسے ایک گوسفندہ ذبح کرنا پڑے گا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:183 | volume:0


Answer-2: جان بوجھ کر عمرہ تمتع کے بعد سر منڈ وانا حرام ہے اور احتیاط کی بناہ پر ایک گوسفند کفارہ دے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:291 | volume:0


Answer-3: جان بوجھ کر عمرہ تمتع کے بعد سر منڈ وانا حرام ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:264 | volume:0



485

Category : خمس

Question : ایک سید فقیر کو کتنی مقدار تک خمس دے سکتے ہیں؟


Answer-1: احتیاط واجب کی بنا پر ایک سال کے خرچے سے زیادہ ایک سید کو خمس نہیں دے سکتے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:341 | volume:0


Answer-2: احتیاط واجب کی بنا پر ایک سال کے خرچے سے زیادہ ایک سید کو خمس نہیں دے سکتے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:326 | volume:0


Answer-3: احتیاط واجب کی بنا پر ایک سال کے خرچے سے زیادہ ایک سید کو خمس نہیں دے سکتے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:280 | volume:0


Answer-4: احتیاط واجب کی بنا پر ایک سال کے خرچے سے زیادہ ایک سید کو خمس نہیں دے سکتے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:316 | volume:0



486

Category : خمس

Question : جس سید کے خرچے کسی پر واجب ہوں لیکن وہ سید کے خرچے نہیں دے سکتا تو کیا سید کو خمس دیا جاسکتا ہے؟


Answer-1: جس سید کے خرچے کسی پر واجب ہوں لیکن وہ سید کے خرچےنہیں دے سکتا تو اس سید کو خمس دیا جا سکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:341 | volume:0


Answer-2: جس سید کے خرچے کسی پر واجب ہوں لیکن وہ سید کے خرچےنہیں دے سکتا تو اس سید کو خمس دیا جا سکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:326 | volume:0


Answer-3: جس سید کے خرچے کسی پر واجب ہوں لیکن وہ سید کے خرچےنہیں دے سکتا تو اس سید کو خمس دیا جا سکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:316 | volume:0


Answer-4: جس سید کے خرچے کسی پر واجب ہوں لیکن وہ سید کے خرچے نہیں دے سکتا تو سید کو خمس دیا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:280 | volume:0



487

Category : نماز

Question : سجدے کی حالت میں پیر کے انگوٹھوں کے سر ے کا زمین پر لگنا واجب ہے؟


Answer-1: سجدے کی حالت میں پیر کے انگوٹھوں کا زمین پر لگنا واجب ہے لیکن ضروری نہیں انگوٹھوں کے سر ے زمین پر لگیں۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:204 | volume:0


Answer-2: سجدے کی حالت میں احتیاط واجب ہے کہ پاوٰں کے انگوٹھوں کے سر ے زمین پر لگیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:165 | volume:0


Answer-3: سجدے کی حالت میں پیر کے انگوٹھوں کا زمین پر لگنا واجب ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:181 | volume:0


Answer-4: سجدے کی حالت میں پیر کے انگوٹھوں کا زمین پر لگنا واجب ہے لیکن ضروری نہیں انگوٹھوں کے سر ےزمین پر لگیں۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:189 | volume:0



488

Category : حج

Question : حج کا احرام کس مقام سے باندھا جاتا ہے؟


Answer-1: حج کا احرام مکہ میں کسی بھی مقام سے باندھا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:264 | volume:0


Answer-2: حج کا احرام مکہ میں کسی بھی مقام سے باندھا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:282 | volume:0


Answer-3: حج کا احرام مکہ میں کسی بھی مقام سے باندھا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:310 | volume:0


Answer-4: حج کا احرام مکہ میں کسی بھی مقام سے باندھا جاسکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:185 | volume:0



489

Category : حج

Question : حج کا پہلا واجب کیا ہے؟


Answer-1: حج کا پہلا واجب احرام کا باندھنا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:263 | volume:0


Answer-2: حج کا پہلا واجب احرام کا باندھنا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:281 | volume:0


Answer-3: حج کا پہلا واجب احرام کا باندھنا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:310 | volume:0


Answer-4: حج کا پہلا واجب احرام کا باندھنا ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:184 | volume:0



490

Category : حج

Question : حج کا احرام باندھنے کا بہترین وقت کیا ہے؟


Answer-1: حج کے احرام کا بہترین وقت آٹھ ذی الحجہ کی ظہر ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:263 | volume:0


Answer-2: مستحب ہے کہ حج کا احرام ترویہ کے دن باندھا جائے بلکہ احوط ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:282 | volume:0


Answer-3: مستحب ہے کہ حج کا احرام ترویہ کے دن باندھا جائے بلکہ احوط ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:310 | volume:0


Answer-4: حج کے احرام کا بہترین وقت ترویہ کا دن یعنی آٹھ ذی الحجہ ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:184 | volume:0



491

Category : نماز

Question : اگر کوئ شخص سجدے میں پیشانی کو زمین پر نہ رکھ سکتا ہو اس کے سجدے کا کیا حکم ہے؟


Answer-1: جو شخص سجدے میں پیشانی کو زمین پر نہ رکھ سکتا ہو لیکن اتنا جھک سکتا ہو کہ عرفاً سجدہ کہلائے مقدار ممکن جھکے اور سجدہ گاہ کو بلند چیز پر رکھ کر سجدہ کرے اور بقیہ اعضاء سجدہ زمین پر رکھے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:205 | volume:0


Answer-2: جو شخص سجدے میں پیشانی کو زمین پر نہ رکھ سکتا ہو جتنا جھک سکتا ہو جھکے اور سجدہ گا ہ کو بلند چیز پر رکھ کر پیشانی کو اس طرح اس پر رکھے کہ کہا جائے کہ سجدہ کیا ہے اور بقیہ اعضا ء سجدہ کو زمین پر رکھے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:166 | volume:0


Answer-3: جو شخص سجدے میں پیشانی کو زمین پر نہ رکھ سکتا ہو جتنا جھک سکتا ہو جھکے اور سجدہ گا ہ کو بلند چیز پر رکھ کر پیشانی کو اس طرح اس پر رکھے کہ کہا جائے کہ سجدہ کیا ہے اور بقیہ اعضا ء سجدہ کو زمین پر رکھے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:182 | volume:0


Answer-4: جو شخص سجدے میں پیشانی کو زمین پر نہ رکھ سکتا ہو جتنا جھک سکتا ہو جھکے اور سجدہ گا ہ کو بلند چیز پر رکھ کر پیشانی کو اس طرح اس پر رکھے کہ کہا جائے کہ سجدہ کیا ہے اور بقیہ اعضا ء سجدہ کو زمین پر رکھے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:190 | volume:0



492

Category : حج

Question : اگر کوئی شخص مسئلہ نہ جاننے کی وجہ سے بغیر احرام کے مکہ باہر چلا جائے تو اسکا کیا وظیفہ ہے؟


Answer-1: اگر کوئی شخص مسئلہ نہ جاننے کی وجہ سے بغیر احرام کے مکہ سے باہر چلا جائے تو اسکے لئے ضروری ہے کہ مکہ آئےاور احرام باندھے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:265 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی شخص مسئلہ نہ جاننے کی وجہ سے بغیر احرام کے مکہ سے باہر چلا جائے تو اسکے لئے ضروری ہے کہ مکہ آئےاور احرام باندھے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:283 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی شخص مسئلہ نہ جاننے کی وجہ سے بغیر احرام کے مکہ سے باہر چلا جائے تو اسکے لئے ضروری ہے کہ مکہ آئےاور احرام باندھے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:310 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی شخص مسئلہ نہ جاننے کی وجہ سے بغیر احرام کے مکہ سے باہر چلا جائے تو اسکے لئے ضروری ہے کہ مکہ آئےاور احرام باندھے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:185 | volume:0



493

Category : حج

Question : اگرکوئی شخص بغیر احرام کے مکہ سے باہر چلا جائےاور وقت کی کمی کی وجہ سے واپس پلٹنا ممکن نہ ہو تو انکا کیا وظیفہ ہے؟


Answer-1: اگر کوئی شخص بغیر احرام کے مکہ سے باہر چلا جائے اور کسی وجہ سے اسکا پلٹنا ممکن نہ ہو تو جہاں ہو وہیں سے احرام باندھ لے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:مناسک حج | Page:263 | volume:0


Answer-2: اگر کوئی شخص بغیر احرام کے مکہ سے باہر چلا جائے اور کسی وجہ سے اسکا پلٹنا ممکن نہ ہو تو جہاں ہو وہیں سے احرام باندھ لے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:مناسک حج امام و رہبر | Page:283 | volume:0


Answer-3: اگر کوئی شخص بغیر احرام کے مکہ سے باہر چلا جائے اور کسی وجہ سے اسکا پلٹنا ممکن نہ ہو تو جہاں ہو وہیں سے احرام باندھ لے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:مناسک حج امام با حواشی | Page:310 | volume:0


Answer-4: اگر کوئی شخص بغیر احرام کے مکہ سے باہر چلا جائے اور کسی وجہ سے اسکا پلٹنا ممکن نہ ہو تو جہاں ہو وہیں سے احرام باندھ لے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:مناسک حج | Page:185 | volume:0



494

Category : خمس

Question : اگر مثلاًچاول پر خمس واجب ہو گیا ہو تو کیا آٹے سے کہ جس پر خمس واجب نہ ہوا ہو خمس دے سکتے ہیں؟


Answer-1: اگر مثلاًچاول پر خمس واجب ہو گیا ہو تو حاکم شرع کی اجازت سے آٹے سے کہ جس پر خمس نہ ہوادا کر سکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:331 | volume:0


Answer-2: اگر مثلاًچاول پر خمس واجب ہو گیا ہو توآٹے سے خمس ادا کر سکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:تحریر الوسیلہ | Page:330 | volume:1


Answer-3: اگر مثلاًچاول پر خمس واجب ہو گیا ہو تو حاکم شرع کی اجازت سے آٹے سےادا کر سکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:307 | volume:0


Answer-4: اگر مثلاًچاول پر خمس واجب ہو گیا ہو تو حاکم شرع کی اجازت سے آٹے سےادا کر سکتا ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:317 | volume:0



495

Category : خمس

Question : اگر کسی مال پرخمس واجب ہو گیا ہو تو وہ اپنے آپ کو اہل خمس کا مقروض قراردے سکتا ہے تاکہ اس مال پر تصرف کرسکے؟


Answer-1: جس کی گردن پر خمس ہو وہ اپنے آپ کو اہل خمس کا مقروض قرا ر نہیں دے سکتا۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:331 | volume:0


Answer-2: جس کی گردن پر خمس ہو وہ اپنے آپ کو اہل خمس کا مقروض قرا ر نہیں دے سکتا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:272 | volume:0


Answer-3: جس کی گردن پر خمس ہو وہ اپنے آپ کو اہل خمس کا مقروض قرا ر نہیں دے سکتا۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:308 | volume:0


Answer-4: جس کی گردن پر خمس ہو وہ اپنے آپ کو اہل خمس کا مقروض قرا ر نہیں دے سکتا۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:317 | volume:0



496

Category : طہارت

Question : ایسے ریسٹورینٹ جہاں لاابالی قسم کے لوگ جو نجس اور پاک کی رعایت نہیں کرتے غذا کھاتے ہیں کیا ہم وہاں غذا کھاسکتے ہیں؟


Answer-1: ایسے ریسٹورینٹ جہاں لاابالی قسم کے لوگ گو نجس اور پاک کی رعایت نہیں کرتے غذا کھاتے ہیں اگر آپ کو وہاں لائی گئی غذا کی نجاست کے بارے میں اطمینان نہ ہو تو کھاسکتے ہیں۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:26 | volume:0


Answer-2: ایسے ریسٹورینٹ جہاں لاابالی قسم کے لوگ جو نجس اور پاک کی رعایت نہیں کرتے غذا کھاتے ہیں اگر آپ کو وہاں لائی گئی غذا کی نجاست کے بارے میں یقین نہ ہو تو کھاسکتے ہیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:19 | volume:0


Answer-3: ایسے ریسٹورینٹ جہاں لاابالی قسم کے لوگ جو نجس اور پاک کی رعایت نہیں کرتے غذا کھاتے ہیں اگر آپ کو وہاں لائی گئی غذا کی نجاست کے بارے میں یقین نہ ہو تو کھاسکتے ہیں۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:21 | volume:0


Answer-4: ایسے ریسٹورینٹ جہاں لاابالی قسم کے لوگ جو نجس اور پاک کی رعایت نہیں کرتے غذا کھاتے ہیں اگر آپ کو وہاں لائی گئی غذا کی نجاست کے بارے میں اطمینان نہ ہو تو کھاسکتے ہیں۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:24 | volume:0



497

Category : طہارت

Question : اگر کسی شخص کے اختیار میں کوئی چیز ہو اور وہ کہے وہ نجس ہے تو کیا ہمیں تسلیم کرلینا چاہیے؟


Answer-1: اگر کسی شخص کے اختیار میں کوئی چیز ہے جیسے نوکر وغیرہ اور وہ کہے فلاں چیز نجس ہے اگر وہ متہم نہ ہو تو چیز نجس تصور کی جائے گی۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:26 | volume:0


Answer-2: اگر کسی شخص کے اختیار میں کوئی چیز ہے جیسے نوکر وغیرہ اور وہ کہے فلاں چیز نجس ہے تو چیز نجس تصور کی جائے گی۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:19 | volume:0


Answer-3: اگر کسی شخص کے اختیار میں کوئی چیز ہے جیسے نوکر وغیرہ اور وہ کہے فلاں چیز نجس ہے تو چیز نجس تصور کی جائے گی۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:22 | volume:0


Answer-4: اگرکسی شخص کے اختیار میں کوئی چیز ہے جیسے نوکر وغیرہ اور وہ کہے فلاں چیز نجس ہے اگر وہ جھوٹ بولنے پر متہم نہ ہو تو چیز نجس تصور کی جائے گی۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:24 | volume:0



498

Category : طہارت

Question : اگرانسان کو گمان ہوکہ فلاں چیز نجس ہے تو کیا اَس چیز سے اجتناب کرنا چاہیے؟


Answer-1: اگر کسی چیز کے بارے میں گمان ہو کہ نجس ہے تو اَس چیز سے اجتناب کرنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:25 | volume:0


Answer-2: اگر کسی چیز کے بارے میں گمان ہو کہ نجس ہے تو اَس چیز سے اجتناب کرنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:19 | volume:0


Answer-3: اگر کسی چیز کے بارے میں گمان ہو کہ نجس ہے تو اَس چیز سے اجتناب کرنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:21 | volume:0


Answer-4: اگر کسی چیز کے بارے میں گمان ہو کہ نجس ہے تو اَس چیز سے اجتناب کرنا ضروری نہیں ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:23 | volume:0



499

Category : طہارت

Question : کیا دو عادل مرد کے کہنے سے کسی چیز کی نجاست ثابت ہوجاتی ہے؟


Answer-1: دو عادل مرد کے کہنے سے بھی نجاست ثابت ہوتی ہےبشرطیکہ وہ نجاست کی وجہ بتائیں۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:توضیح المسائل | Page:26 | volume:0


Answer-2: دو عادل مرد کے کہنے سے بھی نجاست ثابت ہوتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:توضیح المسائل | Page:19 | volume:0


Answer-3: دو عادل مردکے کہنے سے بھی نجاست ثابت ہوتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:توضیح المسائل | Page:22 | volume:0


Answer-4: دو عادل مرد کے کہنے سے بھی نجاست ثابت ہوتی ہے۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:توضیح المسائل | Page:24 | volume:0



500

Category : خمس

Question : جسکی ماں سیدانی ہو اسکو خمس دے سکتے ہیں؟


Answer-1: جسکی ماں سیدانی ہو اسکو خمس نہیں دے سکتے ۔

Scholar:آیت اللہ سید علی حسینی سیستانی | Book:منھاج الصالحین | Page:382 | volume:1


Answer-2: جسکی ماں سیدانی ہو اسکو خمس نہیں دے سکتے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید روح اللہ موسوی خمینی | Book:تحریر الوسیلہ | Page:334 | volume:1


Answer-3: جسکی ماں سیدانی ہو اسکو خمس نہیں دے سکتے ۔

Scholar:آیت اللہ مرحوم سید محمد ابو القاسم الخوئی | Book:منھاج الصالحین | Page:366 | volume:2


Answer-4: جسکی ماں سیدانی ہو اسکو خمس نہیں دے سکتے ۔

Scholar:آیت اللہ شیخ حسین وحید خراسانی | Book:منھاج الصالحین | Page:366 | volume:2